سعودی شوریٰ کونسل کی خواتین ارکان کا دورہ بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی

''خواتین اور امت مسلمہ کی ترقی ''کے موضوع پر سیمینار میں شرکت اور خطاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کی شوریٰ کونسل کی خواتین اراکین نے جمعہ کے روز بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی کے صدر ڈاکٹر احمد یوسف الدریویش سے ملاقات کی اور جامعہ کے خواتین کیمپس میں '' خواتین اور امت مسلمہ کی ترقی ''کے موضوع پر منعقدہ سیمینار میں شرکت کی۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے رکن سعودی مجلس شوریٰ لينه بنت خالد بن عبدالرحيم آل معينا نے کہا کہ اسلام کی عظیم خواتین نوجوانون نسل کے لیے رول ماڈل ہونی چاہئیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسی خواتین جو امور خانہ داری کے ساتھ ساتھ ملازمت بھی کرتی ہیں ان کی خدمت معاشرے اور عائلی زندگی میں ترقی کے لیے مثالی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ سعودی عرب کی مجلس شوریٰ کے کل 150 ارکان ہیں جن میں سے 30 کی تعداد خواتین پر مبنی ہے۔

ڈاکٹر فاطمة بنت فائز حسن الشهری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وحدت امت میں ہی بھلائی اور ترقی کا راز پنہاں ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ امت مسلمہ ایک جسد واحد کی طرح ہے اور سرخرو ہونے کے لیے مسلمانوں کو تقویٰ کے ساتھ ساتھ عورتوں کو معاشرے میں کردار ادا کرنے کے برابر مواقع فراہم کرنا ہوں گے۔

سیمنار سے رکن سینٹ آف پاکستان سینیٹر نزہت صادق نے اپنے خطاب میں طالبات پر زور دیا کہ وہ اپنی صلاحیتوں پر اعتماد کریں اور اپنی سوچ کو بلند رکھیں۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی خواتین لڑاکا پائلٹس سے لے کر کوہ پیمائی اور سیاست میں اپنا لوہا منوا چکی ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ عورت کا بامعنی کردار معاشرتی ترقی کی کنجی ہے ۔

تقریب سے صدر ڈاکٹر احمد یوسف الدریویش نے بھی خطاب کیا ۔ انہوں نے کہ کہا کہ خواتین وہ قوت ہیں جو مسلم دنیا کی تقدیر بدل سکتی ہیں ۔ خواہ گھر ہو یا پورا معاشرہ اس کی ترقی کا انحصار عورت پر ہے ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستانی خواتین با شعور اور با صلاحیت ہیں جو ہر میدان میں اپنی صلاحیتوں کو منوا رہی ہیں۔ ڈاکٹر الدریویش نے سعودی خواتین ارکان مجلس شوریٰ کے عورت اور معاشرتی ترقی کے حوالے سے خیالات کی تعریف کی اور آمد پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

اس موقع پر صدر خواتین کیمپس ڈاکٹر فرخندہ ضیاء نے اپنی خطاب میں موضوع کی مناسبت سے خطاب کرنے والے مقررین اور مہمانان کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی یونیورسٹی کے خواتین کیمپس میں 15 ہزار سے زائد طالبات کی موجودگی امت مسلمہ کے روشن مستقبل کی ضمانت ہے۔ تقریب کے آخر میں صدر جامعہ نے مہمانوں کو یونیورسٹی کی یادگاری شیلڈ پیش کیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں