.

معاشی خودمختاری کے بغیر آزادی کا کوئی تصور نہیں: جنرل قمر جاوید باجوہ

آرمی چیف کا نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں قومی معیشت پر سیمینار سے خطاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ ملک کو اس وقت مشکل معاشی حالات کا سامنا ہے۔ حکومتی اقدامات کی کامیابی کیلئے سب کو کردار ادا کرنا ہو گا۔ معاشی خودمختاری کے بغیر ملکی استحکام ممکن نہیں۔

فوج کے شعبہ تعلقاتِ عامہ(آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غور کی جانب سے جاری کیے گئے پریس ریلز کے مطابق نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی میں قومی معیشت پر سیمینار منعقد ہوا جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ واضح رہے کہ چیف آف آرمی سٹاف کو حال ہی میں معاشی امور پر فیصلہ ساز قومی ترقیاتی کونسل کا ممبر بھی بنایا گیا ہے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا کہ حکومتی اقدامات کی کامیابی کیلئے سب کو کردار ادا کرنا ہو گا، اب ذمہ داریاں نبھانے کی ضرورت ہے۔ وقت آ گیا ہے سب ایک قوم بن کر سوچیں تاکہ حکومت کے مشکل اقدامات کامیاب ہوسکیں۔

آرمی چیف نے برطانوی تاریخ دان پال کنیڈی اورورلڈ بینک کے سابق صدررابرٹ میک نارا کے قول کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ پال کنیڈی نے کہا تھا کسی قوم کی دفاعی مضبوطی کا انحصارمعاشی مضبوطی پر ہے جب کہ رابرٹ میک نارا کے مطابق ترقی کے بغیرکوئی سکیورٹی نہیں ۔

انہوں نے کہا کہ ملک کو مشکل معاشی حالات کاسامنا ہے، معاشی خود مختاری کے بغیر آزادی کا کوئی تصور نہیں۔ قومی اہمیت کے امور پر کھل کر بات کرنے کی ضرورت ہے۔ اس طرح کے مذاکرے اور سیمینار انتہائی اہم ہیں۔ تمام تر مشکلات کے باوجود موجودہ معاشی حالات سے نکلنے کیلئے پر امید ہیں۔

سیمینار سے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ، وزیراعلی پنجاب کے مشیر برائے معاشی امور ڈاکٹر سلمان شاہ سمیت دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔