.

کشمیر کی صورتحال، بھارت کا پاکستان کے ساتھ ٹینس میچ کا مقام بدلنے کا مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کشمیر کی موجودہ صورتحال پر بھارتی ٹینس فیڈریشن نے اپنا فیصلہ واپس لیتے ہوئے ڈیوس کپ ٹائی میچ اسلام آباد کے بجائے کسی اور ملک منتقل کرنے کا مطالبہ کر دیا ہے۔

ایشیا اوشیانا گروپ ون ٹائی مقابلے اسلام آباد کے پاکستان اسپورٹس کمپلکس میں 14 اور 15 ستمبر کو ہونا ہیں، جس کے لیے ٹینس کی عالمی تنظیم آئی ٹی ایف نے بھی باضابطہ اسلام آباد کو سیکیورٹی کے حوالے سے کلیئر قرار دیتے ہوئے مقابلوں کے انعقاد کی منظوری دے دی ہے۔

مقابلوں میں شرکت کے لیے بھارت نے بھی جولائی میں اپنی ٹیم پاکستان بھیجنے کی تصدیق کر دی تھی لیکن اب تازہ ترین اطلاع یہ ہے کہ بھارتی زیر انتظام کشمیر کی موجودہ صورتحال پر پاکستان اور بھارت میں جاری کشیدگی کے باعث بھارت نے انٹرنیشنل ٹینس فیڈریشن سے ڈیوس کپ کا مقام کسی اور ملک منتقل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق آل انڈیا ٹینس ایسوسی ایشن کے صدر پراوین مہاجن کا کہنا ہے کہ پاکستان اور بھارت میں کشیدگی اور غیر متوقع صورتحال کے باعث ہم نے آئی ٹی ایف ڈیوس کپ ٹائی کے میچز غیر جانبدار مقام پر منتقل کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

یاد رہے کہ بھارت کی ٹینس ٹیم نے ڈیوس کپ ٹائی کے لیے 55 سال بعد پاکستان کا دورہ کرنا ہے، بھارتی ٹیم 1964 میں آخری مرتبہ پاکستان آئی تھی اور میزبان کو 0-4 سے ہرایا تھا جبکہ 2006 میں پاکستان نے ممبئی میں بھارت کو 2-3 سے شکست دی تھی۔