.

آرامکو حملے،وزیراعظم پاکستان کا سعودی عرب کی مکمل حمایت کا اظہار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

وزیراعظم عمران خان نے سعودی آرامکو کی تنصیبات پر ڈرون حملوں کے بعد پاکستان کی جانب سے سعودی عرب کی مکمل حمایت کا اظہار کیا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق عمران خان نے جمعرات کو جدہ میں السلامہ محل میں ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ملاقات کی ہے اور انھیں پاکستان کی جانب سے سعودی عرب کو تخریبی سرگرمیوں سے نمٹنے کے لیے اپنے مکمل وسائل کے ساتھ حمایت کی یقین دہانی کرائی ہے۔

سعودی ولی عہد نے ان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس طرح کی تخریبی سرگرمیوں کا مقصد پورے خطے کی سلامتی اور استحکام کو تہس نہس کرنا ہے۔انھوں نے ان تخریبی کارروائیوں سے نمٹنے کے لیے مشترکہ کوششوں کی ضرورت پر زور دیا۔

وزیراعظم کے دفتر کی جانب سے اسلام آباد میں جاری کردہ ایک بیان کے مطابق عمران خان نے سعودی آرامکو کی تنصیبات پر گذشتہ ہفتے کے روز حملوں کی مذمت کی ہے۔ انھوں نے سعودی ولی عہد کو بھارت کے زیرانتظامیہ ریاست مقبوضہ جموں وکشمیر کی تازہ صورت حال سے آگاہ کیا۔

وزیراعظم عمران خان بھارت کے مقبوضہ کشمیر کی آئینی حیثیت ختم کرنے کے لیے پانچ اگست کو کیے گئے اقدامات کے بعد سے سعودی ولی عہد سے رابطے میں ہیں۔ بھارتی حکومت کے اس اقدام کے خلاف کشمیری سراپا احتجاج بنے ہوئے ہیں اور بھارتی سکیورٹی فورسز نے ان کے احتجاج کو کچلنے کے لیے تخریبی کارروائیاں شروع کررکھی ہیں۔

دونوں ملکوں کی قیادت نے سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان اقتصادی شعبے میں تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے طریقوں پربھی تبادلہ خیال کیا ہے۔

ملاقات میں پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی ، وزیر اعظم کے سمندر پار پاکستانیوں سے متعلق امور کے خصوصی معاون سیّد ذوالفقار بخاری ،سیکریٹری خارجہ سہیل محمود اور سعودی عرب میں پاکستانی سفیر راجا علی اعجاز بھی موجود تھے۔

سعودی عرب کی جانب سے ملاقات میں وزیر خارجہ ڈاکٹر ابراہیم العساف، وزیر مملکت شہزادہ ترکی بن محمد بن فہد ،وزیر برائے نیشنل گارڈ شہزادہ عبداللہ بن بندر بن عبدالعزیز،سعودی انٹیلی جنس کے سربراہ خالد الحمیدان اور پاکستان میں متعیّن سعودی سفیر نواف المالکی موجود تھے۔

اس سے پہلے وزیراعظم عمران خان اپنے وفد کے ہمراہ سعودی عرب کے دوروزہ سرکاری دورے پر جدہ پہنچے تو شاہ عبدالعزیز بین الاقوامی ہوائی اڈے پر گورنر مکہ شہزادہ خالد الفیصل بن عبدالعزیز، وزیر خارجہ ڈاکٹر ابراہیم العساف اور دوسرے اعلیٰ سعودی حکام نے ان کا استقبال کیا۔

عمران خان جدہ میں دوروزہ قیام کے بعد امریکا روانہ ہوجائیں گے جہاں وہ نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے چوہترھویں سالانہ اجلاس میں شرکت کریں گے۔