.

افغان امن مذاکرات کی معطلی: طالبان کا وفد آج پاکستان پہنچے گا

طالبان سے مذاکرات کی بحالی کے لیے زلمے خلیل زاد اسلام آباد میں موجود

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

افغان امن عمل کے سلسلے میں ملا محمد برادر کی سربراہی میں طالبان کا اعلی سطح کا وفد بدھ کے روز اسلام آباد کا دورہ کرے گا جبکہ امریکی نمائندہ خصوصی برائے پاکستان و افغانستان زلمے خلیل زاد بھی پاکستان پہنچ گئے ہیں۔

طالبان کے ترجمان سہیل شاہین نے پشتو زبان میں ٹویٹر پیغام میں کہا ہے کہ سینئر رہنما ملا محمد برادر کی سربراہی میں اعلی سطح کا وفد پاکستان کا سرکاری دورہ کرے گا۔ طالبان نمائندے پاکستان کے اعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کریں گے جس میں افغان امن عمل سمیت متعدد اہم امور پر بات چیت کی جائے گی۔

سہیل شاہین نے کہا کہ طالبان کو اس دورے کیلیے سرکاری طور پر مدعو کیا گیا ہے۔ افغان امن کے سلسلے میں طالبان اس سے پہلے تین ممالک روس ،چین اور ایران کا دورہ کر چکے ہیں جس کے بعد اب وہ چوتھے ملک پاکستان کا دورہ کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ گذشتہ ماہ امریکا اور طالبان کے درمیان افغان امن معاہدے پر اتفاق ہوگیا تھا اور مذاکرات کامیاب ہونے والے تھے، تاہم پھر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے معاہدے پر دستخط کرنے سے انکار کر دیا جس کے نتیجے میں پورا امن عمل متاثر ہو گیا۔