.

سعودی عرب میں ’’سافٹ پاور‘‘ نے پاکستانی اور بھارتیوں کو اکٹھا کر دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستانی گلوکاروں عاطف اسلم اور راحت فتح علی خان نے ریاض سیزن کے تحت دارلحکومت میں شب جمعہ سجائی گئی محفل موسیقی میں اپنے فن کا مظاہرہ کر کے تارک وطن پاکستانی اور بھارتی شائقین کے دل موہ لیے۔ کنسرٹ کے ٹکٹ کئی روز قبل فروخت ہونے پر پنڈال میں تل دھرنے کو جگہ نہ تھی۔

پروگرام میں تارکین وطن اور مقامی افراد کی عدیم النظیر شرکت نے ریاض میں سر اور روشنیوں کا ایسا دلفریب آہنگ پیدا کیا کہ جس پر شرکاء تادیر جھومتے رہے۔ اس سیزن کا افتتاح گذشتہ ہفتے مشہور گروپ بی ٹی ایس کے ایل کے پاپ سٹار کی دلکش پرفارمنس سے ہوا تھا۔

پاکستانی پلے بیک سنگر، موسیقار اور اداکار عاطف اسلم نے اپنے کئی شہرہ آفاق گیت سنا کر حاضرین سے خوب داد وصول کی۔ ان میں قوالی بھی شامل تھی۔

محفل موسیقی کو پاکستانی اور بھارتی وطن کے لیے بیک وقت کھولنے کے فیصلے کی سوشل میڈیا پر بڑے پیمانے میں داد وتحسین ہو رہی ہے۔ ایک پاکستانی شہری ندیم اختر کے اپنی ٹویٹ میں کہا ہے ’’محفل موسیقی میں میرے قریب بیٹھا شخص بھارتی شہری ہے اور ہم ریاض سیزن کے زیر اہتمام ہونے والے اس پروگرام سے یکساں لطف اندوز ہو رہے ہیں۔ موسیقی کی اس طاقت سے اندازہ ہوتا ہے کہ اس کی کوئی سرحد نہیں ہوتی۔‘‘

عاطف اسلم کو گذشتہ دنوں گلوکاری کے پروگرام کوک سٹوڈیو میں حمدیہ نظم ’وہی خدا ہے‘ کو منفرد انداز میں پیش کرتے ہوئے سنا گیا تھا جسے سوشل میڈیا پر بھرپور پذیرائی ملی۔

گذشتہ ہفتے یو ٹیوب کے ذریعے یہ کلام جاری کیا گیا۔ اس سے قبل پاکستان کے مشہور کلاسیکی گلوکار نصرت فتح علی خان کی آواز میں اسے مقبول ترین سمجھا جا رہا ہے جسے دیکھنے اور سننے والے تقریبا 13 ملین افراد کی جانب سے پذیرائی مل چکی ہے۔

یاد رہے کہ 11 اکتوبر سے 15 دسمبر تک 70 روز جاری رہنے والے ریاض سیزن میں دنیا بھر سے آنے والے ثقافتی طائفے اور تفریحی ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔