.

کوئٹہ میں ایف سی کی گاڑی کے نزدیک بم دھماکا، 2افراد جاں بحق ، 14 زخمی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے رقبے کے اعتبار سے سب سے بڑے صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں منگل کے روز فرنٹئیر کور ( ایف سی) کے گاڑی کے نزدیک بم دھماکے میں دو افراد جاں بحق اور چودہ زخمی ہوگئے ہیں۔

پولیس کے مطابق لیاقت بازار کے نزدیک میکانگی روڈ پر بم ایک موٹر سائیکل کے ساتھ نصب تھا اور اس کو ایف سی کی گاڑی کے نزدیک دھماکے سے اڑا دیا گیا۔پولیس نے دھماکے کے بعد علاقے کا محاصرہ کر لیا ہے اور تلاشی کی کارروائی شروع کردی ہے۔

کوئٹہ سول اسپتال کے ترجمان وسیم بیگ نے بم دھماکے میں دو افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔انھوں نے بتایا ہے کہ اسپتال میں چودہ زخمیوں کو منتقل کیا گیا ہے،ان میں دو سکیورٹی اہلکار بھی شامل ہیں۔

بلوچستان کے وزیراعلیٰ جام کمال نے اس بم دھماکے کی مذمت کی ہے اور بے گناہ شہریوں کے جانی نقصان پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔انھوں نے کہا ہے کہ بزدل دہشت گردوں نے ایک مرتبہ پھر شہر اور صوبے کا امن تہ وبالا کرنے کی کوشش کی ہے۔بے گناہ شہریوں کو دہشت گردی کا نشانہ بنانے والوں کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے گا۔

واضح رہے کہ نومبر میں کوئٹہ کے علاقے کچلاک میں ایک بم دھماکے میں فرنٹیئر کور کے دو اہلکار شہید اور پانچ زخمی ہوگئے تھے۔یہ بم سڑک کے کنارے نصب تھا اور اس سے ایف سی کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا تھا۔