پاکستان میں کرونا وائرس کے 2 نئے کیسز سامنے آ گئے

ایک کیس سندھ اور دوسرا اسلام آباد میں سامنے آیا: ڈاکٹر ظفر مرزا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے تصدیق کی ہے کہ پاکستان میں کرونا وائرس کے 2 نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔

اسلام آباد میں معاون خصوصی برائے اطلاعات ونشریات فردوس عاشق اعوان کے ہمراہ پریس کانفرنس کے دوران انہوں نے بتایا کہ ایک کیس سندھ اور ایک اسلام آباد میں رپورٹ ہوا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پہلے رپورٹ ہونے والے مریض تیزی سے صحت یاب ہو رہے ہیں۔ معاون خصوصی نے میڈیا سے درخواست کی کہ وہ مریضوں سے متعلق ان کی ذاتی معلومات نشر کرنے سے گریز کریں۔

انہوں نے کہا کہ 'کرونا وائرس کے حوالے سے کابینہ کا اجلاس 3 گھنٹے جاری رہا تاہم پاکستان میں کرونا وائرس کے حوالے سے کوئی ایمرجنسی نہیں'۔ ڈاکٹر ظفر مرزا نے کہا کہ ایران اور پاکستان کے درمیان فضائی رابطے منقطع ہیں۔

یاد رہے کہ کراچی میں 22 سالہ نوجوان میں کرونا وائرس کی تصدیق کے بعد وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے دوسرے کیس کی بھی تصدیق کردی تھی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر میں ڈاکٹر ظفر مرزا نے کرونا وائرس کے دو کیسز کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ 'دونوں کیسز کا کلینیکل اسٹینڈرڈ پروٹوکولز کے مطابق خیال رکھا جارہا ہے اور دونوں افراد کی حالت مستحکم ہے۔'

کرونا وائرس گزشتہ برس کے آخر میں چین کے صوبے ہوبے کے دارالحکومت ووہان میں سامنے آیا تھا جس کے بعد جنوری میں مزید کیسز سامنے آ گئے تھے اور چین نے سخت اقدامات کیے تھے۔

دنیا کے سب سے بڑے آبادی کے حامل ملک میں شروع ہونے والے اس مہلک وائرس سے مزید 71 ہلاکتیں ہو گئی ہیں جس سے صرف چین میں اس وائرس سے ہلاک افراد کی تعداد 2 ہزار 633 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 77 ہزار سے زائد افراد اب تک اس سے متاثر ہو چکے ہیں۔

چین کے بعد سب سے زیادہ 977 کیسز جنوبی کوریا سے رپورٹ ہوئے ہیں جہاں 10 افراد جان کی بازی بھی ہار چکے ہیں، کرونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد میں ایران دوسرے نمبر پر ہے جہاں رکن پارلیمنٹ سمیت 19 شہری جان کی بازی ہار چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں