.

اسلام آباد میں پروٹوکول کی گاڑیاں شہریوں کو کچلتے ہوئے فرار، 4 جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے سیکٹر جی11 میں پروٹوکول کی گاڑیوں نے مبینہ طور پر ٹریفک سگنل توڑتے ہوئے 5 شہریوں کو کچل دیا ہے جن میں سے 4 جاں بحق ہو گئے ہیں۔ گاڑی نے سگنل توڑتے ہوئے دوسری طرف سے آنے والی مہران کار اور ایک موٹرسائیکل کو ٹکر ماری۔

اسلام آباد پولیس کے ایس پی سرفراز ورک کے مطابق ڈرائیور فیاض کو حراست میں لیکر حادثے کا سبب بننے والی گاڑی سمیت تھانے منتقل کر دیا گیا ہے۔ ترجمان پولیس نے بتایا کہ حادثہ میں جاں بحق اور زخمی ہونے والے افراد کے لواحقین سے رابطہ کی کوشش کی جا رہی ہے۔

مبینہ طور پر ایک گاڑی میں بڑی سیاسی شخصیت کا شوہر اور بیٹا بھی سوار تھے۔ حادثے کا مقدمہ تھانہ رمنا پولیس اسٹیشن میں درج کر لیا گیا ہے جس میں سیاسی شخصیت کے بیٹے کو بھی نامزد کیا گیا ہے۔

مقدمہ واقعہ میں زخمی والے شہری کی مدعیت میں درج کیا گیا۔ ایف آئی آر کے مطابق جاں بحق ہونے والے نوجوان مانسہرہ سے اے این ایف کا ٹیسٹ دینے آئے تھے۔ سفید رنگ کی جیپ نمبری ڈبلیو وائی 077نے ٹکر ماری۔ جیپ کی ٹکرسے مہران گاڑی میں سوار 4 نوجوان جاں بحق ہوئے۔

ذرائع نے بتایا کہ شوہر اور بیٹے کا میڈیکل ٹیسٹ بھی نہیں کرایا گیا جبکہ حادثے کے بعد گاڑی میں سوار افراد کا میڈیکل کرانا لازمی ہے۔ ایس پی سرفراز ورک اور ان کے ترجمان بلال نے فی الحال مؤقف دینے سے گریز کیا۔

عینی شاہدین کے مطابق پروٹوکول کی گاڑیوں میں ایک کی نمبر پلیٹ سرکاری تھی۔ حادثے کے بعد چار گاڑیاں جائے وقوعہ سے سگنل توڑتے ہوئے نکل گئیں لیکن سرکاری نمبر پلیٹ والی گاڑی کو روک لیا گیا تھا۔

راولپنڈی پولیس نے جائے حادثہ سے فرار ہونے والی گاڑیوں کو نصیر آباد کے قریب روکنے کی کوشش کی لیکن وہ تمام رکاوٹیں توڑتے ہوئے نکل گئیں۔