.

یوم پاکستان کے موقع پر مسلح افواج کی اسلام آباد میں شاندار مشترکہ پریڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یوم پاکستان کے سلسلے میں فوجی پریڈ اسلام آباد کے شکر پڑیاں گراؤنڈ میں منعقد ہوئی جس میں تینوں مسلح افواج نے اپنی فوجی قوت کا مظاہرہ کیا۔

یوم پاکستان کے کی پریڈ میں تینوں مسلح افواج اور دیگر سیکیورٹی فورسزکے دستوں نے مارچ پاسٹ میں حصہ لیا، لڑاکا طیاروں نے فضاء میں کرتب دکھائے۔ پریڈ دیکھنے والوں میں حکومتی و عسکری شخصیات، غیر ملکی سفارت کار اور عام شہری شامل تھے۔ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے پریڈ کا معائنہ کیا۔ اس موقع پر کورونا وائرس سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر (ایس او پیز) کا خیال رکھا گیا۔

جڑواں شہروں میں سیکیورٹی کے خصوصی انتظامات کیے گئے تھے۔ مخصوص علاقوں میں صبح 5بجے سے دوپہر 12بجے تک موبائل فون سروس بند رہی جبکہ کمرشل پروازوں کے لیے فضائی حدود بھی بند رہی۔

پتنگ بازی، ہوائی فائرنگ اور کبوتر بازی بھی پر بھی مکمل پابندی کی گئی۔ 1000سے زائد پولیس اہلکار تعینات کیے گئے جبکہ اسلام آباد اور راولپنڈی میں عام تعطیل کی گئی۔

پریڈ گراؤنڈ کے قریب بلند عمارتوں کی چھتوں پر کھڑے ہونے پر مکمل پابندی تھی، مسلح افواج اور پولیس کے دستے فیض آباد اور ارگرد کے علاقوں میں تعینات کیے گئے۔ علاوہ ازیں سٹی ٹریفک پولیس نے پریڈ کے لیے خصوصی ٹریفک پلان جاری کیا، رات 12کے بعد ہیوی ٹریفک کے داخلہ پر مکمل پابندی تھی۔

صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے یوم پاکستان پریڈ میں پوری قوم کو یوم پاکستان کی مبارکباد دیتے ہوئے کہا عظیم الشان پریڈ کے انعقاد پر قوم افواج پاکستان کو مبارکباد پیش کرتی ہے، دوست ممالک اور دیگر شرکا کا بھی شکرگزار ہوں، دوست ممالک ترقی اور خوشحالی میں ہمارے ساتھ ہیں، ہم دفاعی صلاحیت میں خود مختاری حاصل کرچکے ہیں، 7سال کےقلیل عرصے میں مسلمانان برصغیر آزادی کی نعمت سے سرفراز ہوئے۔

صدر پاکستان نے کہا جنگ ہو یا اندرونی خلفشار، دہشت گردی ہو یا قدرتی آفت عوام اور افواج نے وطن کی حفاظت میں کردار ادا کیا ہے، پاک فوج نے آپریشن ردالفساد میں دہشت گردی کے نیٹ ورک کو نیست و نابود کیا۔