.

17 سال بعد پی آئی اے کی سوات کے لیے پروازیں بحال

اسلام آباد ایئر پورٹ پر پرواز سے قبل کیک کاٹا گیا اور مہمانوں کی تواضع کی گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سوات ایئر پورٹ کو 17 سال بعد کمرشل آپریشن کیلئے بحال کر دیا گیا ۔17 سال کے طویل عرصے بعد سوات ایئر پورٹ کو پروازوں کے لئے دوبارہ کھول دیا گیا۔
پی آئی اے کی پرواز PK 650 مقررہ وقت پر 10 بجے اسلام آباد سے سیدو شریف سوات روانہ ہوئی۔ وزیراعلی خیبر پختونخوا، وزیر ہوابازی اور وزیر مواصلات بھی جہاز پر سوار ہوئے۔ تمام افراد نے قطار میں لگ کر بورڈنگ کارڈ حاصل کیا۔

ایئرپورٹ پر پرواز سے قبل کیک کاٹا گیا اور مہمانوں کی تواضع کی گئی۔ وزیر ہوابازی غلام سرور خان نے معزز مہمانوں کو گلدستے اور تحائف پیش کئے۔سوات ائیر پورٹ پر فلائٹ سے آنے والے مہمانوں کا پر تپاک استقبال کیا گیا، سوات پہنچنے والی فلائٹ میں وزیراعلیٰ کے پی محمود خان، وفاقی وزیر ہوا بازی غلام سرور اور وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید سمیت دیگر اعلی حکام سوار تھے۔

وفاقی وزیر برائے ہوابازی غلام سرور خان نے کہا کہ سترہ سال بعد سوات کے لیے پی آئی اے کی پروازیں شروع کر رہے ہیں، مالی مشکلات اور دہشت گردی کی وجہ سے پچھلے ادوار میں یہ پروازیں بند تھیں، سوات اور مالاکنڈ کے عوام نے سیکورٹی فورسز کے شانہ بشانہ بڑی جوانمردی سے دہشت گردی کا مقابلہ کیا، پی آئی اے کی سوات کیلئے پروازیں وقت کی اہم ضرورت ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہفتے میں دو پرواز یں لاہور اور اسلام آباد سے سوات تک شروع کر دی گئی ہیں جن میں اضافہ کیا جائے گا، پی آئی اے کی پروازوں سے نہ صرف قومی ایئر لائن کی آمدنی میں اضافہ ہو گا بلکی سوات میں سیاحت کو مزید فروغ ملے گا، ان پروازوں سے سوات کے علاقے میں مزید ترقی دیکھنے کو ملے گی۔