.

جامع الحرمین الشریفین کی تعمیر کی منظوری پر پاکستانی علماء کی سعودی حکومت کی تحسین

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے پاکستان علماء کرام اور مشائخ عزام نے سعودی عرب کی جانب سے بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی میں مسجد حرمین شریفین کی تعمیر کے فیصلے کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی قیادت کی مساجد سے محبت اور انہیں اسلامی کی حقیقی ترویج کے عزم کا اظہار ملتا ہے۔

مرکزی جمعیت اہلحدیث کے جنرل سیکرٹیری اور پاکستانی ایوان بالا کے رکن سینیٹر ڈاکٹر حافظ عبدالکریم بخش نے کہا ہے کہ اسلام آباد کے قلب میں جامع الحرمین الشریفین کی تعمیر پاکستانیوں کے لیے سعودی قیادت کا ایک اور منفرد تحفہ ہے۔ فیصل مسجد کی طرز پر یہ مسجد بھی پاکستان اور سعودی عرب کے مابین برادرانہ اسلامی تعلقات کی علامت ثابت ہو گی۔ اس سے بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی کی تاسیس کے عظیم مقاصد کی تکمیل میں مدد ملے گی۔

اسلامی نظریاتی کونسل کے سربراہ ڈاکٹر قبلہ ایاز نے جامع الحرمین الشریفین کی تعمیر کے فیصلے کی تحسین کرتے ہوئے کہا کہ اس سے اسلامی یونیورسٹی میں طلبہ اور اساتذہ کو نماز ادائی کے سلسلے میں درپیش مشکلات حل کرنے میں مدد ملے گی۔ عالمی معیار کی مسجد کی تعمیر سے اسلامی یونیورسٹی کی قدر ومنزلت میں بھی اضافہ ہو گا۔

جامعہ اشرفیہ لاہور کے سربراہ اور اسلامی نظریاتی کونسل کے رکن الشیخ حافظ فضل الرحیم نے پاکستانی علماء کی جانب سے اسلامی یونیورسٹی میں عالمی معیار کی مسجد تعمیر کرنے کے فیصلے کو سراہتے ہوئے کہا کہ یہ مسجد پاکستان میں اسلامی شناخت کا نشان بنے گی۔

ادھر کراچی کی مشہور دینی درس گاہ جامعہ بنوری ٹاؤن کے شعبہ امور خارجہ کے نگران ڈاکٹر سعید خان سکندر نے کہا کہ اس مسجد کی تعمیر کی منظوری ظاہر کرتی ہے کہ مملکت کی قیادت اسلام کی حقیقی تصویر کے پرچار میں مساجد کو کتنی اہمیت دیتی ہے اور اسی وجہ سے دنیا بھر میں اللہ کے گھروں کی تعمیر سعودی قیادت کے خصوصی اور ذاتی اہتمام میں شامل ہے۔