.

افغان سرحد سے دہشت گردوں کی فائرنگ، 2 جوان شہید: آئی ایس پی آر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دہشت گردوں کے افغانستان کی جانب سے شمالی اور جنوبی وزیر ستان میں کیے جانے والے ایک حملے میں پاکستان فوج کے 5 جوان شہید جبکہ دیگر 5 زخمی ہوگئے ہیں۔

پاکستانی فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) نے بتایا کہ پاک ۔ افغان سرحد پر افغانستان سے دہشت گردوں نے پاکستانی سیکیورٹی چیک پوسٹ پر فائرنگ کی، جس کے نتیجے میں 2 جوان شہید ہوگئے۔

دہشت گردوں نے شمالی وزیرستان کے ضلع دتوئی میں سرحدی چیک پوسٹ کو نشانہ بنایا، جس کے جواب میں پاک فوج نے بھرپور جوابی کارروائی کی۔ بیان میں کہا گیا کہ فائرنگ کے تبادلے میں 2 فوجی شہید ہوگئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق شہید ہونے والے جوانوں کی شناخت 43 سالہ حوالدار سلیم عمر اور 35 سالہ لانس نائیک پرویز عمر کے نام سے ہوئی۔

فوج کے محکمہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ پاکستان مستقل طور پر افغانستان سے مطالبہ کرتا رہا ہے کہ وہ اپنی طرف سے مؤثر بارڈر کنٹرول کو یقینی بنائے۔

پاک فوج نے جاری بیان میں کہا کہ پاکستان کے خلاف دہشت گردی کی کارروائیوں کے لیے افغان سرزمین کے استعمال کی مذمت کرتے ہیں۔

علاوہ ازیں جنوبی وزیرستان کے قبائلی ضلع تحصیل تیزارہ کے علاقے نیو کلا میں دہشت گردوں نے سیکیورٹی فورسز پر حملہ کیا جس کے نتیجے میں 3 فوجی شہید جبکہ متعدد زخمی ہوگئے۔

وانا میں پولیس ذرائع نے بتایا کہ حملہ آوروں نے حملے میں راکٹ اور لائٹ مشین گنوں کا استعمال کیا۔ واضح رہے کہ اس طرح کے حملے حال ہی میں تواتر سے ہونے لگے ہیں۔