.

خوشخبری: سمندر پار پاکستانیوں کے لیے اب وراثتی سرٹیفکیٹ کا حصول نادرا کے ذریعے ممکن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے وزارت قانون کو وراثتی سرٹیفکیٹ کے لیے سافٹ ویئر بنانے پر مبارک باد دیتے ہوئے کہا بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے لیے سرٹیفکیٹ کا حصول آسان ہو جائے گا۔

پنجاب میں وراثتی سرٹیفیکیٹس کے اجراء کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہ وزارت قانون کو سرٹیفکیٹ کےلیےسافٹ ویئر بنانے پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے لیے اب وراثتی سرٹیفکیٹ کا حصول آسان ہو جائے گا۔ ورثاء عدالتوں سے رجوع کیے بغیر 15 روز میں سرٹیفیکیٹ حاصل کرسکیں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پنجاب میں نادرا وراثتی سرٹیفکیٹس کے اجراء سے جائیداوں کے تنازعات میں کمی ہوگی۔ عمران خان نے واضح کیا کہ پنجاب کے تمام نادرا سینٹرز وراثتی سرٹیفیکیٹ اجراء کرنے کے مجاز ہوں گے۔ نادرا 2 ہفتوں میں وراثتی سرٹیفکیٹس جاری کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں ہر سسٹم اتنا مشکل ہوگیا ہے جس کی وجہ سےعوام کو کام کروانے یا تو رشوت دینی پڑتی ہے یا پھر مشکلات برداشت کرتے ہیں۔

تحریک انصاف کی حکومت نادرا وراثتی سرٹیفکیٹس کے ساتھ لینڈ ریکارڈ بھی کمپیوٹرائزڈ کر رہی ہے۔ ہزاروں بار دیکھا گیا ہے کہ فائلوں کو آگ بھی لگ جاتی ہے جس سے سب سے زیادہ لینڈ ریکارڈ متاثر ہوتا ہے۔ ہماری کوشش ہے کہ کہ ای گورننس لیکر آئی۔

عمران خان نے مزید کہا کہ اوورسیز پاکستانیوں کو ووٹنگ کے نظام میں شامل کرنےکے لیے ای ووٹنگ سسٹم لانا چاہتے ہیں۔ 90لاکھ اوورسیز پاکستانی اپنے ووٹنگ رائٹ سے محروم ہیں۔ ای وی ایم مشینز کے استعمال سے دھاندلی ختم ہو سکتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ملک کی ترسیلات زر کا انحصار انہی اوورسیز پاکستانیوں پر ہے جو بیرون ملک سے پاکستان ڈالر بھیجتے ہیں، یہ ہمارا اثاثہ ہیں۔