.

چیئرمین سی پیک اتھارٹی عاصم سلیم باجوہ مستعفی،خالد منصورنئے سربراہ مقرر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاک چین اقتصادی راہداری(سی پیک) اتھارٹی کے چیئرمین ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ اپنے عہدے سے مستعفی ہو گئے ہیں۔وزیراعظم عمران خان نے ان کی جگہ خالدمنصور کو اپنامعاون خصوصی برائے سی پیک امورمقررکیا ہے ۔

وزیراعظم کے دفتر نے منگل کے روز خالد منصورکووزیراعظم کا معاون خصوصی برائے سی پیک امور مقررکرنے کا نوٹی فیکیشن جاری کردیا ہے۔اس میں وضاحت کی گئی ہے کہ ان کا تقرراعزازی حیثیت میں کیا گیا ہے۔

سی پیک اتھارٹی کے مستعفی چیئرمین ریٹائرڈ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے بھی ٹویٹر پرلکھا ہےکہ ’’میں اللہ تعالیٰ کا شکرگزار ہوں جس نے مجھے پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) اتھارٹی کے اہم ادارے کےمستقبل کی سمت کا تعیّن کرتے ہوئے تمام سی پیک منصوبوں کے لیے ونڈو کے طور پراٹھانے اور چلانے کا موقع دیا۔ یہ سب کچھ وزیراعظم عمران خان اور ان کی حکومت کے مکمل اعتماد اور حمایت کے بغیر ممکن نہیں تھا۔‘‘

انھوں نے ایک اور ٹویٹ میں لکھا کہ ’’سی پیک کی ترقی کا یہ سفر جاری رہے گا،خالد منصور کے لیے میں نیک خواہشات کا اظہارکرتا ہوں جو اسے آگے لے جانے کے لیے پوری طرح تیار ہیں۔سی پیک پاکستان کے لیے لائف لائن ہے، یہ ہمیں ترقی پسند اورمکمل طور پر ترقی یافتہ ملک میں بدل دے گا۔ان شاءاللہ۔‘‘

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر نے ایک ٹویٹ میں مستعفی چیئرمین کے کردار کوسراہا ہے۔انھوں نے ایک ٹویٹ میں لکھا کہ ’’میں سی پیک کو آگے بڑھانے اور پاک چین اقتصادی راہداری کےدوسرے مرحلے میں داخلے کے ساتھ اس اہم منصوبے کے دائرہ کار کو وسیع کرنے میں کردارادا کرنے پر لیفٹیننٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ کا شکر گزارہوں۔ ان کی لگن اورعزم بڑی طاقت اور حمایت کا ذریعہ تھا۔‘‘

انھوں نے ایک اور ٹویٹ میں خالد منصور کو سی پیک اموار کا معاون خصوصی بننے پرمبارک باد پیش کی ہے اور اتھارٹی میں انھیں خوش آمدید کہا ہے۔خالد منصور توانائی اور پیٹروکیمیکل کے شعبے میں 30 سال سے زیادہ تجربے کے حامل ہیں۔اس سے پہلے وہ مختلف ملکی اور بین الاقوامی اداروں میں اہم عہدوں پر فائز رہ چکے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں