.

نرم خو بصیرانہ صلاحیتوں کی مالک دردانہ بٹ کرونا، سرطان کے خلاف جنگ ہار گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کی سینئر اداکارہ ڈاکٹر دردانہ بٹ 83 برس کی عمر میں کرونا اور سرطان کے خلاف جنگ ہار گئیں۔

انسٹاگرام پر اداکار خالد ملک کی جانب سے دردانہ بٹ کی تصویر شیئر کرتے ہوئے ان کے انتقال کی اطلاع دی گئی۔

خالد ملک نے اپنی پوسٹ کے کیپشن میں لکھا کہ دردانہ (دودی) آپا ہم سب کو چھوڑ کر اپنے خالق حقیقی سے جا ملی ہیں۔

اداکار نے مزید لکھا کہ عقلمند، مزاحیہ، بصیرت والی داردانہ بٹ ایک خاص روح تھیں، جو اب اس دنیا میں نہیں رہی ہیں۔‘

خالد ملک کی پوسٹ شیئر ہوتے ہی سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی جس پر مداحوں کی جانب سے گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا جا رہا ہے۔

ڈاکٹر دردانہ بٹ کنیئرڈ کالج کی فارغ التحصیل تھیں۔ انہوں نے امریکا سے ایجوکیشن ایڈمنسٹریشن میں پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔ ان کی اپنے کزن سے شادی ہوئی تھی جو چند برس قبل انتقال کر گئے تھے۔

انہیں 1985 میں بہترین ٹی وی اداکارہ کا ایوارڈ بھی ملا تھا۔ وہ 2018 میں لکس سٹائل ایوارڈ کی بہترین معاون اداکار کیٹیگری کے لیے نامزد کی گئی تھیں۔

خیال رہے کہ دردانہ بٹ کرونا کے باعث شدید بیمار تھیں اور 2 ہفتوں سے اسپتال میں زیرعلاج تھیں۔

دردانہ بٹ نے اداکاری کا آغاز 70 کی دہائی میں کیا تھا، جبکہ ان کے مشہور ڈراموں میں آنگن ٹیڑھا، ڈگڈگی، تنہائیاں، ففٹی ففٹی، رسوائی اور انتظار شامل ہیں۔

دوسری جانب دردانہ بٹ نے عشق پازیٹو،بالو ماہی، دل دیاں گلاں، عشق پازیٹو، بالو ماہی، دل دیاں گلاں فلم میں بھی اداکاری کے جوہر دکھائے۔