.

افغانستان سے دہشت گردوں کی فوجی چوکی پر فائرنگ، 2 جوان شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بین الاقوامی سرحد کے اس پار افغانستان سے دہشت گردوں کی فوجی چوکی پر فائرنگ کے نتیجے میں 2 جوان شہید ہو گئے جبکہ جوابی کارروائی میں 2 سے 3 دہشت گرد بھی مارے گئے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق افغانستان سے دہشت گردوں نے ضلع باجوڑ میں فوجی چوکی پر فائرنگ کی، جس کا پاک فوج نے بھرپو جواب دیا۔

انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق پاک فوج کی جوابی فائرنگ سے 2 سے 3 دہشت گرد ہلاک اور 3 سے 4 زخمی ہوئے۔

تاہم فائرنگ کے تبادلے میں مردان کے رہائشی 28 سالہ سپاہی جمال اور چترال کے رہائشی 21 سالہ سپاہی ایاز نے جام شہادت نوش کیا۔

بیان میں کہا گیا کہ پاکستان اپنے خلف سرگرمیوں کے لیے دہشت گردوں کی جانب سے افغان سر زمین کے استعمال کی شدید مذمت کرتا ہے اور امید کرتا ہے کہ افغانستان میں موجودہ اور مستقبل کا سیٹ اَپ پاکستان کے خلاف اس طرح کی سرگرمیوں کی اجازت نہیں دے گا۔

واضح رہے کہ رواں ماہ کے اوائل میں ہی افغانستان کے اندر سے دہشت گردوں نے شمالی وزیرستان میں دیواگر میں پاکستانی فوج کی پوسٹ پر فائرنگ کی تھی، جس کے نتیجے میں ایک جوان زخمی ہوگیا تھا۔

آئی ایس پی آر نے کہا تھا کہ پاکستان، افغانستان سے مسلسل درخواست کر رہا ہے کہ وہ مؤثر سرحدی انتظام کو یقینی بنائے۔

8 مئی کو باجوڑ میں پاک ۔ افغان سرحد پر دہشت گردوں کی جانب سے سرحد کے اس پار سے فائرنگ کے نتیجے میں ایک پاکستانی فوجی زخمی ہو گیا تھا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق بین الاقوامی سرحد پر دہشت گردوں نے افغانستان کی طرف سے پاکستان میں ایک فوجی چوکی پر فائرنگ کی۔