.

پاکستان میں 12 برس اور زاید عمر کے بچوں کو سکول میں کرونا ویکسین لگے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان میں کرونا وائرس کی ویکسین کے دائرہ کار کو مزید وسعت دیتے ہوئے اب بچوں کو بھی ٹیکے لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

کرونا وائرس سے نمٹنے کے نگراں ادارے (این سی او سی) کے سربراہ اسد عمر نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا ہے کہ ملک بھر میں 12 سال اور اس سے زائد عمر کے بچوں کو ویکسین لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

پاکستان میں بچوں کو ویکسین لگانے کا فیصلہ این سی او سی کے اجلاس میں کیا گیا ہے۔ اسد عمر کے مطابق بچوں کو ویکسین لگانے کے لیے اسکولوں میں خصوصی مہم چلائی جائے گی۔

پاکستان کرونا اپ ڈیٹ

پاکستان میں گزشہ چوبیس گھنٹوں کے دوران 1400 افراد میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔

حکام کے مطابق گزشتہ روز 44 ہزار 116 افراد کے کرونا ٹیسٹ کیے گئے جب کہ مثبت کیسز کی شرح تین اعشاریہ ایک سات فی صد رہی۔

پاکستان میں کرونا وائرس سے مزید 41 مریض دم توڑ گئے ہیں اور 4015 مریضوں کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے۔

پاکستان میں کرونا وائرس سے اب تک 27 ہزار 638 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ ملک بھر میں اب تک دو کروڑ سے زیادہ افراد کرونا وائرس کی مکمل ویکسین لگوا چکے ہیں۔

پاکستانی حکومت اس سال کے اختتام تک کم سے کم سات کروڑ لوگوں کو کرونا وائرس کی مکمل ویکسین لگانے کا ارادہ رکھتی ہے۔

پاکستان میں اس وقت آٹھ قسم کی ویکسین لگائی جارہی ہیں، جن میں ماڈرنا، سائنوفارم، کین سائنو، سائنویک، ایسٹرازینیکا، فائزر اور سپتنک فائیو شامل ہیں۔