.

کہنہ مشق سفارت کارڈونلڈ بلوم پاکستان میں امریکا کے نئے سفیرنامزد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

صدر جوبائیڈن نے کہنہ مشق سفارت کار ڈونلڈ بلوم کو پاکستان میں امریکا کا نئے سفیر نامزد کیا ہے۔

قبل ازیں منگل کو وائٹ ہاؤس نے ایک اعلان میں کہا کہ ’’صدرجوبائیڈن کیریئرڈپلومیٹ ڈونلڈ ارمین بلوم کواسلامی جمہوریہ پاکستان میں اپنا نیا ایلچی نامزد کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔‘‘واضح رہے کہ کسی امریکی سفیرکے تقرر کے لیے سینیٹ کی تصدیق درکارہوتی ہے۔اسلام آباد میں ایک عرصے سے امریکی سفیر تعینات نہیں ہے۔

مسٹر بلوم 2019ء سےعرب ملک تُونس میں امریکا کے سفیر کی حیثیت سے خدمات انجام دے رہے ہیں۔تُونس شمالی افریقا میں امریکا کے لیے ایک اہم سفارتی چوکی ہے اور یہیں سے ہمسایہ ملک لیبیا سمیت تُونس کی سرحدوں سے باہرامریکی مفادات کی نگرانی اور نمایندگی کی جارہی ہے۔

وہ خطے میں طویل سفارتی تجربہ کے حامل ہیں اوراس سے پہلے پاکستان کے پڑوسی ملک افغانستان کے دارالحکومت کابل میں امریکی سفارت خانے میں تعینات رہ چکے ہیں۔افغانستان سے امریکی فوج کے مکمل انخلا کے بعد سے امریکی سفارت خانہ غیرفعال ہے جبکہ پاکستان پڑوسی ملک میں طالبان کے برسراقتدار آنے کے بعد سے سفارت کاری میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔

ڈونلڈ بلوم عربی زبان میں مہارت رکھتے ہیں اور روانی سے عربی بول سکتے ہیں۔اس سے قبل وہ تُونس میں لیبیا کے بیرون ملک امریکی سفارت خانے کے ناظم الامور، یروشلم میں امریکی قونصل خانے میں قونصل جنرل اور امریکی محکمہ خارجہ میں جزیرہ نماعرب امور کے دفتر میں ناظم الامورکے عہدے پرتعینات رہ چکے تھے۔

وہ افغان دارالحکومت کابل میں امریکی سفارت خانے میں سیاسی قونصلراورمصر کے دارالحکومت قاہرہ میں امریکی سفارت خانے میں قونصلر برائے اقتصادی اور سیاسی امور کے طورپربھی خدمات انجام دے چکے ہیں۔

ڈونلڈ بلوم نے اپنے سفارتی کیریئرکے دوران میں ملٹی نیشنل فورس اسٹریٹجک انگیجمنٹ سیل کے سویلین شریک ڈائریکٹر، بغداد میں امریکی سفارت خانہ سیاسی قونصلر،کویت میں سیاسی قونصلر اور محکمہ خارجہ کے دفتر برائے اسرائیل اورفلسطینی امور میں اسرائیل کے ڈیسک آفیسر،ڈپٹی ڈائریکٹر اور قائم مقام ڈائریکٹر کے طور پر خدمات انجام دی ہیں۔