نور مقدم قتل کیس: شور پر جج نے مرکزی ملزم ظاہر جعفر کو کمرہ عدالت سے باہر نکال دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسلام آباد کی مقامی عدالت کے جج نے نور مقدم قتل کیس میں مرکزی ملزم ظاہر ذاکر جعفر کی جانب سے شور کرنے پر کمرہ عدالت سے باہر نکال دیا۔

ایڈیشنل سیشن جج عطا ربانی کی عدالت میں مرکزی ملزم ‏ظاہر جعفر سمیت تمام ملزمان پیش ہوئے۔

دوران سماعت ملزم ظاہر جعفر نے متعدد مرتبہ کچھ کہنے کی کوشش کی جس پر عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے پولیس کو حکم دیا کہ ملزم کو باہر لے جائیں۔

ملزم نے اس دوران مزاحمت کی جس پر پولیس کےجوانوں نے اس کو ٹانگوں اور بازووں سے پکڑ کر عدالت سے جیل منتقل کر دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں