بحیرۂ عرب میں دو پاکستانی مچھیرے ڈوب گئے،تین کشتیاں ڈوبنے سے 10 لاپتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے ساحلی علاقے میں طوفانی موسم کے بعد ماہی گیری کرنے والی تین کشتیاں ڈوب گئی ہیں۔ان پر سوار دو مچھیرے ڈوب گئے ہیں اور 10 دیگر لاپتا ہو گئے ہیں جبکہ بحریہ اور میری ٹائم سکیورٹی جہازوں نے 32 ماہی گیروں کو بچا لیا ہے۔

تین کشتیاں ہفتے کے روز ساحلی قصبے کیٹی بندر کے قریب بحیرہ عرب میں ڈوب گئی تھیں۔ساحلی ضلع ٹھٹھہ کے ڈپٹی کمشنرغضنفر قادری نے بتایا کہ بحریہ اور میری ٹائم سکیورٹی کشتیوں کی مدد سے لاپتا مچھیروں کی تلاش کے لیے سرچ اور ریسکیو آپریشن کیا گیا ہے۔

انھوں نے بتایا کہ ماہی گیروں کی کشتیاں سمندرمیں خراب موسم میں نکلی تھیں۔ان میں بعض واپس چلی گئی تھیں لیکن عملہ کے 44 ارکان کو لے جانے والی تین کشتیاں تیزہواؤں کے نتیجے میں بھنورمیں ڈوب گئیں۔

انھوں نے بتایا کہ امدادی ٹیمیں سمندر میں واقع چھوٹے جزائرپرپناہ لینے والے کچھ ماہی گیروں کو واپس لانے کے لیے بھیجی گئی تھیں لیکن ان میں سے دو ساحل پر تیرنے کی کوشش میں ڈوب گئے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ تمام لاپتا ماہی گیروں کی تلاش تک امدادی کام جاری رہے گا۔

واضح رہے کہ پاکستانیوں کی ماہی گیری کے لیے استعمال ہونے والی کشتیاں عام طور پر جدید نیوی گیشن گیئر اور حفاظتی آلات سے لیس نہیں ہوتی ہیں۔ بہت سے ماہی گیرخراب موسم کے انتباہ کو نظراندازکردیتے ہیں اورایک اچھا شکار پکڑنے کی کوشش میں اکثرخطرات مول لیتے ہیں اور بعض اوقات اپنی جانوں سے ہاتھ دھوبیٹھتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں