صدر کو اسمبلیاں تحلیل کرنے کی تجویز بھیج دی، وزیرِ اعظم کا قوم سے خطاب

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ’میں نے صدر پاکستان کو اسمبلیاں تحلیل کرنے کی ایڈوائس بھیج دی ہے۔‘ ’میں اپنی ساری قوم کو مبارکباد دنا چاہتا ہوں کہ قومی اسمبلی نے تحریک عدم اعتماد مسترد کر دی ہے۔‘

اتوار کو قوم سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ’ساری قوم کے سامنے غداری اور سازش ہو رہی تھی میں قوم کو پیغام دینا چاہتا ہوں کہ گھبرانا نہیں۔‘ انہوں نے کہا کہ ’یہ ملک 27 رمضان کو وجود میں آیا تھا اس طرح کی سازش کو قوم کامیاب نہیں ہونے دے گی۔‘

اس سے پہلے قومی اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر قاسم سوری نے اتوار کو متحدہ اپوزیشن کی جانب سے وزیراعظم عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کو ’آئین کے منافی اور صوابط کے خلاف قرار دیتے ہوئے‘ اسے مسترد کر دیا۔

آج جب قومی اسمبلی کا اجلاس شروع ہوا تو ڈپٹی سپیکر قاسم سوری نے وقفہ سوالات کا سلسلہ دوبارہ شروع کرتے ہوئے وفاقی وزیر فواد چوہدری کو بات کرنے کا موقع دیا۔
فواد چوہدری نے گفتگو کرتے ہوئے اس خط کا حوالہ دیا جس کے بارے میں وزیر اعظم عمران خان دعویٰ کرتے ہیں کہ ان کی حکومت کو ختم کرنے کی باقاعدہ سازش کی جا رہی

فواد چوہدری نے بات کرتے ہوئے کہا کہ ’یہ فیصلہ عدم اعتماد کا نہیں آرٹیکل 5 کا ہے۔‘ انہوں نے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 5 اے کے تحت ہر شہری کو ملک کا وفادار ہونا چاہیے۔ فواد چوہدری نے مزید سوال کیا: ’بتایا جائے کیا بیرون ملک کی مدد سے پاکستان میں حکومت تبدیل کی جا سکتی ہے؟

ساتھ ہی انہوں نے خط کے حوالے سے ڈپٹی سپیکر سے رولنگ مانگی جس کے فوراً بعد قاسم سوری نے قرار داد مسترد کرنے کا اعلان کر دیا۔

ڈپٹی سپیکر کی رولنگ کے بعد اپوزیشن بینچز نے شدید احتجاج شروع کر دیا اور سپیکر کے روسٹرم کا گھیراؤ کر لیا اور نعرے لگائے۔ اس اثنا میں اپوزیشن اراکین آپس میں مشاورت کرتے رہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں