.

وزیراعظم شہباز شریف سعودی عرب کے تین روزہ دورے پر روانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

وزیر اعظم محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ وہ دورہ سعودی عرب کے دوران سعودی قیادت کے ساتھ کثیر الجہتی مذاکرات کریں گے۔

جمعرات کو اپنے ایک ٹویٹ میں وزیراعظم نے کہا کہ ’’وہ بھائی چارے اور دوستی کے رشتوں کی تجدید اور اعادہ کرنے کے لیے سعودی عرب کے دورے پر جا رہے ہیں۔

سعودی قیادت سے تفصیلی تبادلہ خیال کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ سعودی عرب ہمارے عظیم دوستوں میں سے ایک ہے اور خادم حرمین شریفین کا ہمارے دلوں میں ایک خاص مقام ہے۔‘‘

وفد میں وفاقی وزرا بلاول بھٹو زرداری، مریم اورنگزیب، خواجہ آصف، خالد مقبول صدیقی، چوہدری سالک حسین اور سابق فاٹا کے علاقے سے رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ بھی شامل ہیں۔

دورے کے دوران وزیراعظم سعودی قیادت کے ساتھ ملاقاتوں میں اقتصادی، تجارتی اور سرمایہ کاری جیسے تعلقات کو فروغ دینے کے علاوہ سعودی عرب میں پاکستانی افرادی قوت کے لیے روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع پیدا کرنے کے حوالے سے بات چیت کریں گے۔ فریقین باہمی دلچسپی کے امور خاص طور پر متعدد علاقائی اور بین الاقوامی ایشوز پر بھی تبادلہ خیال کریں گے۔

ادھر وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ وزیر اعظم محمد شہباز شریف کا دورہ سعودی عرب مثالی دوستی کا ایک نیا تاریخی باب کھولے گا، چار سال کے دور گھبراہٹ کے بعد پاکستان کے دوستوں کی محفل پھر سے آباد ہونے جا رہی ہے۔

جمعرات کو اپنے ایک ٹویٹ میں انہوں نے کہا کہ پاکستان کے محسن اور سعودی عرب کے ولی عہد عزت مآب شہزادہ محمد بن سلمان کی خصوصی دعوت پر وزیر اعظم شہباز شریف آج، جمعرات کو حجاز مقدس روانہ ہورہے ہیں اور مدینہ منورہ پہنچیں گے۔

انہوں نے کہا کہ 28 سے 30 اپریل کا یہ دورہ وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد محمد شہبازشریف کا پہلا غیر ملکی دورہ ہے جو دونوں ممالک کے درمیان برادرانہ، پرجوش اور باہمی اعتماد پر مبنی تاریخی تعلقات کی تجدید کا مظہر ہے اور مثالی دوستی کا ایک نیا تاریخی باب کھولے گا۔

انہوں نے کہا کہ چار سال کے دور گھبراہٹ کے بعد پاکستان کے دوستوں کی محفل پھر سے آباد ہونے جا رہی ہے، استحکام، ترقی اور خوش حالی کی منزل کا پھر سے آغاز مبارک ہو۔ عمرہ کی سعادت اور روضہ رسول پاکﷺ پر درود پڑھنے کی برکتیں ہمارے ساتھ ہوں گی۔ سعودی عرب پاکستان دوستی ہمیشہ زندہ باد۔

مقبول خبریں اہم خبریں