حکومتِ پاکستان نے پِٹرول کی قیمت مزید30 روپے فی لیٹربڑھادی،مہنگائی میں اوراضافہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

پاکستان کی وفاقی حکومت نے پِٹرولیم مصنوعات کے نرخوں میں مزید 30 روپے فی لیٹراضافے کا فیصلہ کیا ہے جس سے اب پِٹرول کی فی لیٹرقیمت 209 روپے ہوجائے گی۔

وفاقی وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ نئی قیمتوں کا اطلاق آج جمعرات کی نصف شب سے ہوگا۔حکومت نے پندرہ روز سے بھی کم وقت میں پِٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 60 روپے فی لیٹرتک اضافہ کیا ہے جس سے اشیائے ضروریہ کی قیمتوں اور ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں بھی ہوشربا اضافہ ہوگا۔

حکومت کے تازہ فیصلے کے بعد پِٹرول کی قیمت 209.86 روپے، ڈیزل کی قیمت 204.15 روپے، مٹی کے تیل کی قیمت 181.94 روپے اور لائٹ ڈیزل کی قیمت 178.31 روپے فی لیٹرہوگی۔

وزیرخزانہ نے دعویٰ کیا کہ حکومت کو30 روپے فی لیٹرکے اضافے کے باوجود پِٹرول میں قریباً 9 روپے فی لیٹر کے نقصان کا سامنا ہے کیونکہ ہم ایندھن پرکوئی ٹیکس وصول نہیں کررہے ہیں۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ حکومت روزانہ کی بنیاد پربین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے ساتھ بات چیت کر رہی ہے۔ہم ان کے تمام مطالبات قبول نہیں کرسکتے لیکن کچھ نکات ایسے ہیں جن پر ہمیں اتفاق کرنا ہوگا۔

تاہم انھوں نے کہاکہ حکومت ملک بھرمیں یوٹیلٹی اسٹورز پرچینی اور گندم بالترتیب 70 روپے فی کلوگرام اور40 روپے فی کلوگرام مہیّاکرے گی اور ان کی قیمتوں میں استحکام کو یقینی بنائے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں