پنجاب اسمبلی کی مخصوص نشستوں پر نوٹیفکیشن سے متعلق فیصلہ محفوظ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پنجاب اسمبلی کی مخصوص نشستوں پر نوٹیفکیشن سے متعلق درخواستوں پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے تحریک انصاف اور مسلم لیگ ن کی درخواستوں پر مخصوص نشستوں سے متعلق کیس کی سماعت کی اور سماعت مکمل ہونے کے بعد اس حوالے سے فیصلہ محفوظ کرلیا گیا جو کہ آج بروز جمعرات کسی بھی وقت سنایا جائے گا۔

خیال رہے کہ چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ امیر بھٹی نے پانچ مخصوص نشستوں پر اراکین اسمبلی کا نوٹیفکیشن جاری نہ کرنے کے خلاف درخواستوں پر الیکشن کمیشن سے جواب طلب کیا تھا۔ اس حوالے سے درخواست گزاران کے وکلاء عامر سعید راں اور اظہر صدیق نے موقف اپنایا تھا کہ الیکشن کمیشن نے منحرف ہونے والے پارٹی ممبران صوبائی اسمبلی کو ڈی سیٹ کر دیا ، جن میں مخصوص نشستوں پر منتخب ہونے والی ممبران صوبائی اسمبلی بھی شامل تھیں۔

درخواست دہندگان کے وکلاء نے کہا کہ الیکشن کمیشن ڈی سیٹ ہونے والے اراکین کی جگہ نئے اراکین کا نوٹیفکیشن جاری نہیں کر رہا۔ الیکشن کمیشن قانون اور رولز کی خلاف وزری کر رہا ہے۔ الیکشن کمیشن کو نوٹیفکیشن جاری کرنے کے لیے خط بھی لکھا گیا۔ تحریک انصاف نے مخصوص نشستوں کے نوٹیفیکیشن کے لیے نام بھی فراہم کر دیے ہیں۔ استدعا ہے کہ عدالت فوری الیکشن کمیشن کو محضوض نشستوں کا نوٹیفکیشن جاری کرنے کا حکم دے۔

چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس محمد امیر بھٹی نے پاکستان تحریک انصاف کی درخواست پر سماعت کی اور فاضل چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ وفاقی حکومت کی جانب سے کون ہے؟ جس پر وفاقی حکومت کے وکیل نے اپنی موجودگی بارے آگاہ کیا اور بتایا کہ الیکن الیکشن کمیشن کا اپنا وکیل بھی ہے۔ جس کے بعد لاہورہائیکورٹ نے تحریک انصاف کی جانب سے پانچ مخصوص نشستوں پر اراکین اسمبلی کا نوٹیفکیشن جاری نہ کرنے کے خلاف کیس میں الیکشن کمیشن سے تحریری جواب طلب کر لیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں