توانائی بچت مہم: سندھ کے بعد پنجاب میں بھی مارکیٹیں رات 9 بجے بند ہوں گی

عید کی شاپنگ کے لیے اوقات کار کی پالیسی کا تاجر برادری کی مشاورت سے جائزہ لیا جائے گا: حمزہ شہباز

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

وزیر اعلی پنجاب حمزہ شہباز نے توانائی کی بچت کے لیے پنجاب بھر میں مارکیٹیں، بازار اور کاروباری مراکز رات 9 بجے بند کرنے کا اعلان کر دیا۔

اجلاس کے بعد جاری ہونے والے سرکاری ہینڈ آوٹ کے مطابق حمزہ شہباز نے صوبہ بھر کے تاجر رہنماوں اور نمائندوں سے ملاقات کرنے کے بعد کہا کہ توانائی کی بچت کے لئے صوبہ بھر کی تاجر برادری کی مشاورت سے بڑا فیصلہ کیا ہے۔ حمزہ شہباز کا مزید کہنا تھا کہ ریسٹورنٹس رات ساڑھے 11بجے تک کھلے رہیں گے جبکہ شادی ہالز سابق پالیسی کے تحت رات 10 بجے تک کھل سکیں گے۔

انہوں نے کہا کہ ہفتے کو تاجر برادری کو کاروبار کے اوقات میں خصوصی رعایت دی جائے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ میڈیکل سٹورز پر اس فیصلے کا اطلاق نہیں ہو گا اور عید کی شاپنگ کے لیے اوقات کار کی پالیسی کا تاجر برادری کی مشاورت سے جائزہ لیا جائے گا۔

دوسری طرف، تاجر برادری نے توانائی بحران میں حکومتی اقدامات کی بھرپور حمایت کا اعلان کیا ہے اور صوبہ بھر کے تاجر عہدیداروں اور نمائندوں نے توانائی کی بچت کے لیے حکومتی اقدامات کو سراہا۔ وزیر اعلی پنجاب حمزہ شہباز نے کہا کہ تاجر برادری نے ہمیشہ مشکل وقت میں قوم کا ساتھ دیا ہے اور میں آج بھی حکومتی اقدامات کی غیر مشروط حمایت پر تاجر برادری کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔

تاجر برادری کے عہدیداروں نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور تجاویز بھی پیش کیں۔ اجلاس میں خواجہ سلمان رفیق،خواجہ احمد حسان، رانا مشہور احمد، سید علی حیدر گیلانی، عطا تارڑ، چودھری بلال اصغر،عمران گورایہ اور متعلقہ حکام بھی موجود تھے۔

واضح رہے کہ 8 جون 2022 کو قومی اقتصادی کونسل (این ای سی) کے اجلاس میں چاروں صوبوں نے ملک میں توانائی کی بچت کے لیے بازار اور دکانیں رات ساڑھے 8 بجے بند کرنے کی تجویز پر اصولی طور پر اتفاق کیا تھا۔

اجلاس میں وفاقی کابینہ کے 7 جون 2022 کے اجلاس میں توانائی کی بچت کے حوالے سے تجاویز اور فیصلوں سے متعلق صوبائی وزرائے اعلی کو آگاہ کیا گیا تھا۔ چاروں صوبوں نے بازار اور دکانیں رات ساڑھے 8 بجے بندکرنے کی تجویز پر اصولی اتفاق کیا تھا۔سندھ، پنجاب اور بلوچستان کے وزرائے اعلی نے 2 روز کی مہلت مانگی تھی تاکہ وہ اپنے اپنے صوبوں میں تجارتی وکارباری تنظیموں سے مشاورت مکمل کریں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں