اقتصادی روابط نے پاک چین دوستی کی جڑیں مضبوط کر دیں: شہباز شریف

کمیونسٹ پارٹی چین کے ڈائریکٹر کمیشن خارجہ امور کی وزیراعظم سے ملاقات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

چین کی کمیونسٹ پارٹی کے ڈائریکٹر کمیشن خارجہ امور چائنیز کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کے پولٹ بیورو (Politboru) کے رکن اور سی پی سی کے خارجہ امور کمیشن کے ڈائریکٹر عزت مآب جناب یانگ جیچی نے اعلیٰ اختیاراتی وفد کے ہمراہ وزیر اعظم پاکستان شہباز شریف سے اسلام آباد میں ملاقات کی۔

اس موقع پر وزیر اعظم شہباز شریف نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ’’کہ اقتصادی روابط نے پاک چین دوستی کی جڑیں مضبوط کر دی ہیں۔ پاکستان چینی سرمایہ کاروں کو مسابقتی مراعات فراہم، اعلیٰ معیار کے بنیادی ڈھانچے تک رسائی اور غیر متزلزل سکیورٹی انتظامات کے ساتھ تعاون جاری رکھے گا۔‘‘

اس موقع پر محمد شہباز شریف کی جانب سے سی پیک منصوبوں کی رفتار تیز کرنے اور جلد تکمیل کے حکومتی عزم کا اظہار کیا گیا ہے۔ وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ سی پیک اور بڑھتے ہوئے اقتصادی روابط نے پاکستان اور چین کے عوام کے درمیان پائیدار دوستی کی جڑیں مزید مضبوط کر دی ہیں۔

پاکستان دونوں ممالک کے روابط، خوشحالی اور عوامی بہبود کے مشترکہ وژن کو عملی جامہ پہنانے کے لیے چین کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لیے تیار ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان چینی سرمایہ کاروں کو مسابقتی مراعات، اعلیٰ معیار کے بنیادی ڈھانچے تک رسائی اور غیر متزلزل سکیورٹی انتظامات کے ساتھ تعاون جاری رکھے گا۔

شہباز شریف نے تمام شعبوں میں دوطرفہ تعلقات کو مزید فروغ دینے پر رہنمائوں کے اتفاق رائے پر عمل درآمد کو تیز کرنے کے لیے ڈائریکٹر یانگ کے دورے کی اہمیت پر زور دیا۔ انہوں نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ اقتصادی تعاون وسیع پیمانے پر پاک چین شراکت داری کی بنیاد بن چکا ہے۔

وزیراعظم نے اس موقع پر کراچی دہشت گردانہ حملے کی شدید مذمت کا اعادہ کیا اور قصورواروں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لیے پاکستان کے عزم پر زور دیا۔ انہوں نے ملک میں چینی شہریوں، منصوبوں اور اداروں کی حفاظت، سلامتی اور تحفظ کے لیے اقدامات بڑھانے کے لیے پاکستان کے عزم کا اعادہ کیا۔

اسکے علاوہ انہوں نے پاکستانی طلبا کی واپسی میں سہولت فراہم کرنے پر چین کا شکریہ ادا کیا اور امید ظاہر کی کہ بقیہ طلبا جلد واپس لوٹ سکیں گے۔ باہمی دلچسپی کے بین الاقوامی مسائل پر خیالات کا تبادلہ کرتے ہوئے وزیراعظم نے بھارت کے غیر قانونی طور پر مقبوضہ جموں و شمیر میں بھارت کے بلا روک ٹوک جبر اور انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کے منفی اثرات کو بھی اجاگر کیا۔

ادھر چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان زاؤ لیجیان نے کہا ہے کہ چین پاکستان کی حمایت جاری رکھے گا۔

چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان زاؤ لیجیان نے کہا ہے کہ چین پاکستان کی معاشی ترقی، لوگوں کے معیار زندگی کو بہتر بنانے اور مالی استحکام کو برقرار رکھنے کے لیے پاکستان کی حمایت جاری رکھے گا۔

انھوں نے انٹرنیشنل پریس سینٹر (آئی پی سی) میں معمول کی نیوز بریفنگ کے دوران کہا کہ چین اور پاکستان سدا بہار سٹرٹیجک شراکت دار ہیں، چین نے معاشی ترقی، لوگوں کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کے لیے ہمیشہ پاکستان کی مدد کی ہے۔ چین دونوں ممالک کے درمیان قریبی تعلقات استوار کرنے کیلیے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرنے کے لیے تیار ہے۔

ترجمان نے کہا کہ پاکستانی حکومت اور چینی سفارتخانہ چینی اداروں کے تحفظ کے حوالے سے قریبی رابطے اور ہم آہنگی کو برقرار رکھے ہوئے ہیں۔

پاکستان حکومت نے سی پیک اور بین الحکومتی تعاون کے منصوبوں میں شامل چینی اہلکاروں کے تحفظ کیلیے ایک خصوصی سکیورٹی فورس قائم کی اور پاکستان میں چینی عہدیداروں کی حفاظت بھی کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں