کیا پاکستان، بھارت کے ساتھ تجارت پر عائد پابندی ہٹا سکتا ہے؟

پاکستان میں سیلاب سے ہونے والی تباہی دیکھ کر دکھ ہوا، بھارتی وزیر اعظم

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

پاکستان نے روایتی حریف بھارت کے ساتھ تجارت کی بحالی کا اشارہ دیا ہے۔ بدترین سیلاب نے اہم فصلوں کو بڑے پیمانے پر تباہ اور مویشیوں کو ہلاک کر دیا ہے۔ مہنگائی پہلے ہی زیادہ تھی اور اب سبزیوں کی قیمتیں مزید بڑھ گئی ہیں۔

پاکستانی حکام نے پیر کے روز بھارت کے ساتھ تجارت دوبارہ شروع کرنے کا اشارہ دیا ہے۔ وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا ہے کہ حکومت پاکستان ملک میں فصلوں کی تباہی کے بعد لوگوں کو ریلیف دینے کے لیے بھارت سے سبزیاں اور دیگر کھانے پینے کی اشیاء کی 'درآمد پر غور‘ کر سکتی ہے۔

حالیہ ہفتوں میں ہزاروں ہیکٹر اراضی پر کھڑی فصلوں کی تباہی کے بعد ملک میں خوراک اور سبزیوں کی قیمتیں آسمان کو چھونے لگی ہیں۔

وزیر خزانہ نے کہا ہے کہ ابتدائی اندازوں کے مطابق تقریباً 10 بلین ڈالر کا نقصان ہو چکا ہے۔ پاکستان میں پہلے ہی مہنگائی عروج پر تھی اور اس تازہ آفت سے اس میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔

پاکستان میں گزشتہ تیس برسوں میں ہونے والی تباہ کن بارشوں کی وجہ سے ایک ہزار پچاس سے زائد افراد ہلاک جبکہ تینتیس ملین سے زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔ حکام نے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہلاکتوں کی تعداد میں مزید اضافہ ممکن ہے۔ امدادی کارکن ابھی تک ایسے ہزاروں افراد کو بچانے میں مصروف ہیں، جو سیلابی پانیوں میں پھنس چکے ہیں۔ بچائے گئے افراد کو نہ صرف خوراک بلکہ خیموں کی بھی ضرورت ہے۔

نئی دہلی کی جانب سے سن 2019 میں اپنے زیر کنٹرول کشمیر کی خصوصی آئینی حیثیت کو منسوخ کر دیا گیا تھا، جس کے بعد پاک بھارت تعلقات ایک نئی نچلی سطح پر آ گئے تھے۔ اس کے بعد دونوں ملکوں کے مابین تلخی بڑھی اور اسلام آباد نے سفارتی تعلقات کو محدود بنانے کے ساتھ ساتھ دوطرفہ تجارت معطل کر دی تھی جبکہ سرحد پار آمد ورفت بھی روک دی گئی تھی۔

تاہم حکومت پاکستان نے کووڈ انیس کی وبا پھوٹنے کے بعد بھارت سے دوا سازی کے لیے مصنوعات کی درآمد کی اجازت دے دی تھی۔

گزشتہ سال مارچ میں سابق وزیراعظم عمران خان کی حکومت نے بھارت کے ساتھ تجارت بحال کرنے کا اعلان کیا تھا، لیکن اگلے ہی دن یہ فیصلہ واپس لے لیا گیا تھا۔

سیلاب کی تباہ کاریوں پر مودی کا اظہار افسوس

ادھر بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے پاکستان میں سیلاب سے نقصانات پر دکھ اور ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔

ایک بیان میں بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ پاکستان میں سیلاب سے ہونے والی تباہی دیکھ کر دکھ ہوا۔ ہم جانی نقصان پر متاثرہ خاندانوں سے اظہار تعزیت کرتے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ زخمیوں اور قدرتی آفت سے متاثرہ تمام لوگوں سے اظہار ہمدردی کرتے ہیں۔

نریندر مودی نے مزید کہا کہ وہ پاکستان میں سیلاب کے بعد معمولات کی جلد از جلد بحالی کے لیے پر امید ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں