پٹرول کی قیمت میں 1۰45 روپے فی لیٹر اضافہ، ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت برقرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کی وفاقی حکومت نے منگل کی شب کوپٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کیا ہے۔اس کے تحت پٹرول کی قیمت میں اضافہ اور مٹی کے تیل اورلائٹ ڈیزل میں معمولی کمی کی گئی۔ اس کے علاوہ ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت برقرار رکھی گئی ہے۔

وفاقی حکومت کے خزانہ ڈویژن کی جانب سے جاری سرکلر میں پٹرول کی قیمت میں ایک روپے 45 پیسے کا اضافہ کیا گیا ہے۔وزارت خزانہ کے مطابق ڈیزل کی قیمت میں کوئی تبدیلی نہیں ہوئی جب کہ مٹی کے تیل کی قیمت 8.30 روپے فی لیٹر اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 4.26 روپے فی لیٹر کم کی گئی ہے۔

حکومت پاکستان کی فائنانس ڈویژن کی جانب سے جاری کیا جانے والا سرکلر۔
حکومت پاکستان کی فائنانس ڈویژن کی جانب سے جاری کیا جانے والا سرکلر۔

پٹرول کی قیمت بڑھنے کے بعد نئی قیمت 237 روپے 43 پیسے فی لیٹر ہو گئی ہے جب کہ ڈیزل کی قیمت 245.43 روپے ہی برقرار ہے۔ اس کے علاوہ مٹی کے تیل کی قیمت 202 روپے 2 پیسے فی لیٹر ہو گئی اور لائٹ ڈیزل آئل کی قیمت 197 روپے 28 پیسے فی لیٹرہوگئی۔

وزارت خزانہ کے مطابق نئی قیمتوں کا اطلاق بدھ 21 ستمبر سے کردیا گیا ہے۔حکومت نے پٹرول پر لیوی میں 8 پیسے کی کمی کی ہے جب کہ ہائی اسپیڈ ڈیزل پر لیوی 8 پیسے فی لیٹر بڑھا دی گئی ہے۔ پٹرول پر لیوی 37 روپے 50 پیسے سے کم ہوکر 37.42 روپے ہو گئی ہے اور ڈیزل پر لیوی 7.50 روپے سے بڑھا کر 7 روپے 58 پیسے فی لیٹر کردی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں