خاتون جج کو دھمکی کیس: عمران خان نے عدالت میں معافی مانگ لی؛ فرد جرم موخر

عدالتی بنچ کا سابق وزیر اعظم کو معافی کا بیان حلفی جمع کروانے کا حکم دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سابق وزیر اعظم پاکستان اور چئیرمین تحریک انصاف عمران خان نے اسلام آباد ہائیکورٹ کے بنچ کے سامنے خاتون جج کو دھمکیاں دینے کے کیس میں معافی مانگ لی۔

عدالتی بنچ کے سربراہ چیف جسٹس اسلام آباد ہائی کورٹ نے عمران خان کی جانب سے معافی کو تسلیم کرتے ہوئے کہا کہ فرد جرم کو مزید ایک ہفتے کے لئے موخر کرتے ہوئے ملزم کو بیان حلفی جمع کروانے کا حکم دیا۔

عمران خان نیازی اپنی پارٹی کے رہنمائوں شاہ محمود قریشی، شبلی فراز اور وکیل حامد خان کے ہمراہ اسلام آباد ہائیکورٹ پہنچے۔ اس موقع پر سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے اور کسی بھی غیر متعلقہ شخص کو احاطہ عدالت میں جانے کی اجازت نہیں ہے۔

عمران خان نے عدالت میں مؤقف اختیار کیا کہ اگر کوئی ریڈ لائن کراس کی ہے تو اس پر معافی مانگتا ہوں، اگر عدالت کچھ اور چاہے تو وہ بھی کرنے کو تیار ہوں۔ اس کے علاوہ عمران خان نے سیشن جج زیبا سے بذات خود معافی مانگنے کی پیشکش بھی کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں