پاکستان واپسی اور سینیٹ میں حلف کے بعد اسحاق ڈار کو وزیر خزانہ بنانے پراتفاق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مسلم لیگ (ن) کے قائد نواز شریف اور وزیراعظم شہباز شریف کی لندن میں ہونے والی ملاقات میں اہم فیصلے کیے گئے ہیں جس کے تحت سینیٹ کی رکنیت کا حلف اٹھانے کے بعد اسحاق ڈار بطور وزیر خزانہ حلف اٹھائیں گے۔

مقامی میڈیا میں ذرائع کے حوالے سے شائع ہونے والی خبروں میں بتایا گیا ہے کہ اہم ترین ملاقات میں نواز شریف، وزیراعظم شہباز شریف اوراسحاق ڈار شریک تھے جہاں سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے اپنی ملک واپسی کے منصوبے سے متعلق وزیراعظم کو بھی آگاہ کیا۔

نیوز رپورٹس کے مطابق سابق وزیر خزانہ نے وطن واپسی بارے اپنے پلان بارے وزیراعظم شہباز شریف کو آگاہ کیا۔ علاوہ ازیں ملاقات میں اسحاق ڈار کی واپسی اور سینیٹ حلف کے معاملے پر بھی مشاورت ہوئی ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اسحاق ڈار آئندہ ہفتے ملک واپس آ کر احتساب عدالت کے سامنے پیش ہوں گے۔ اسحاق ڈار کو ملک واپسی پر موجودہ وزارت خزانہ کی ٹیم ملک کی موجودہ معاشی حالات پر بریفنگ بھی دی گئی۔

ذرائع کے مطابق سنیٹ کی رکنیت کا حلف اٹھانے کے بعد اسحاق ڈار بطور وزیر خزانہ حلف اٹھائیں گے، معیشت کو کیسے سنبھالا دیا جائے، مہنگائی اور ڈالر کو کم کرنے پر بھی مشاورت ہوئی۔

ملاقات کے اختتام کے بعد اسحق ڈار نے صحافیوں کو بتایا کہ ملک کی واپسی کے لیے حتمی تاریخ کا اعلان کل (24 تاریخ) کو ہوگا جبکہ میری بدھ کو فلائٹ کنفرم ہے۔

اسحق ڈار نے بتایا کہ کل پھر اجلاس ہو گا۔ کیا آپ وزیر اعظم کے ساتھ پاکستان جا رہے ہیں سے متعلق سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ کل بتاوں گا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ مسلم نواز شریف وزیر اعظم شہباز شریف پارٹی رہنماوں سے مشاورت کریں گے اہم فیصلوں کا اعلان کل ہو گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں