کراچی کے علاقے صدر میں چینی شہریوں پر حملہ، ایک ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کے سب سے بڑے شہرکراچی کے علاقے صدر میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ایک چینی شہری ہلاک اور دو زخمی ہوگئے ہیں۔

یہ واقعہ بدھ کو صدر کے علاقے میں واقع ایمپریس مارکیٹ کے نزیک ایک ڈینٹیل کلینک میں پیش آیا ہے۔کراچی جنوبی کے سینیرسپرنٹنڈنٹ پولیس اسد رضا نے جائے وقوعہ پرصحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے تصدیق کی ہے کہ حملے کی زد میں آنے والے تینوں چینی شہری تھے اور دونوں زخمیوں کو اسپتال منتقل کردیا گیاہے۔

انھوں نے مزید بتایا کہ حملہ آور مریض ہونے کا بہانہ بنا کر کلینک میں داخل ہوا تھا۔بعد ازاں ایک پریس ریلیز میں پولیس نے ہلاک ہونے والے چینی شہری کی شناخت 25 سالہ رونل ڈی ریمنڈ چاؤ کے نام سے کی ہے اور 72 سالہ مارگراڈ اور 74 سالہ رچرڈ زخمی ہیں۔

پولیس سرجن ڈاکٹر سمعیہ سید نے بتایا کہ گولیوں سے زخمی ایک شخص کو مردہ حالت میں ڈاکٹر رتھ فاؤسول اسپتال لایا گیا تھا اور دیگر دوافراد،ایک مرد اور ایک خاتون کو زخمی حالت میں جناح پوسٹ گریجویٹ میڈیکل سنٹر منتقل کردیا گیا ہے۔

پولیس سرجن نے بتایا کہ دونوں زخمی غیرملکیوں کی حالت تشویش ناک ہے کیونکہ ان کے پیٹ میں گولیاں لگی ہیں۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ سندھ سید مرادعلی شاہ نے چینی شہریوں پر حملے کے واقعے کا نوٹس لے لیا ہے اورایڈیشنل آئی جی کراچی سے تفصیلی رپورٹ طلب کرلی ہے۔ سرکاری بیان کے مطابق مرادعلی شاہ نے حملہ آوروں کی فوری گرفتاری کا بھی حکم دیا اور کہا کہ اس طرح کے واقعات ناقابل برداشت ہیں۔

یہ واقعہ ملک میں چینی شہریوں پر حملوں کے حالیہ سلسلے کی کڑی ہے۔ اپریل میں جامعہ کراچی کے کنفیوشس انسٹی ٹیوٹ کے باہرخودکش حملے میں تین چینی شہری ہلاک ہو گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں