نامور صحافی عمران اسلم 70 برس کی عمر میں انتقال کر گئے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

معروف صحافی اور جیو و جنگ گروپ کے صدر عمران اسلم جمعہ کو 70سال کی عمر میں انتقال کر گئے۔

جیو نیوز کی رپورٹ کے مطابق عمران اسلم کی طبیعت کچھ عرصے سے ناساز تھی اور وہ ہسپتال میں زیر علاج تھے۔

صحافی، اسکرپٹ رائٹر، وائس اوور آرٹسٹ، ٹی وی نیٹ ورک کے سربراہ اور ایک ہمہ جہت بصیرت رکھنے والے عمران اسلم نے تین دہائیوں پر محیط کیریئر میں بڑی کامیابیاں حاصل کیں۔

ان کا سیاسی شخصیات سے گہرا تعلق رہا اور بحیثیت صحافی انہوں نے اعلیٰ پیشہ ورانہ خدمات انجام دیتے ہوئے مشکل خبروں کو اخبار اور چینل میں بہترین انداز میں پیش کرنے کے ساتھ ساتھ انٹرٹینمنٹ کی صنعت کی معروف اور تجربہ افراد کے ہمراہ کام کرتے ہوئے ان کے لیے اسکرپٹ لکھے اور چینل کے امور ذمے دارانہ انداز میں انجام دیے۔

ذرائع کے مطابق وہ دی نیوز کے ایڈیٹر اور ایڈیٹر ان چیف رہے اور جیو نیوز لانچ کرنے والی ٹیم کا حصہ تھے، انہوں نے مختلف ڈراموں کے اسکرپٹ تحریر کرنے کے ساتھ ساتھ جیو کہانی سمیت کئی پراجیکٹ کامیابی سے لانچ کیے۔

انہوں نے پی ٹی وی کا معروف ڈراما ’روزی‘ تحریر کیا تھا جس میں معین اختر نے اداکاری کے جوہر دکھائے تھے جبکہ وہ کچھ عرصے تک جیو نیوز کے پروگرام ’ہم سب امید سے ہیں‘ بھی تحریر کرتے رہے۔

عمران اسلم کی موت نے پر ساتھی صحافیوں، سیاست دانوں اور معاشرے کے دیگر طبقات سے تعلق افراد نے گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اہلخانہ سے تعزیت کی۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے جنگ اور جیو گروپ کے صدر عمران اسلم کی وفات پر اپنے گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کرتے ہوئے ان کی خدمات کو سراہا ہے ۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں