آڈیو لیک کا شور: بشری بی بی اور زلفی بخاری کی مبینہ آڈیو سامنے آ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سابق وزیر اعظم پاکستان اور چیئرمین پاکستان تحریکِ عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی اور زلفی بخاری کی مبینہ آڈیو سامنے آ گئی۔

اس آڈیو کے آغاز میں زلفی بخاری کو بشریٰ بی بی سے سلام کرنے کے بعد ان کی خیریت دریافت کرتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔
اس کے بعد بشریٰ بی بی زلفی بخاری سے یہ کہتی ہیں کہ ’خان صاحب کی کچھ گھڑیاں ہیں، انہوں نے کہا ہے کہ آپ کو بھیج دوں‘۔

اُنہوں نے مزید کہا کہ ’گھڑیاں ان کے استعمال کی نہیں وہ چاہتے ہیں کہ آپ بیچ دیں‘۔

زلفی بخاری نے بشریٰ بی بی کی یہ بات سننے کے بعد جواب میں کہا کہ’ضرور مرشد میں کردوں گا، میں کر دوں گا جی‘۔

سوشل میڈیا پر مبینہ آڈیو لیک کے حوالے سے تبصروں اور میمز کا لامتناہی سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔ رہنماء مسلم لیگ ن عظمیٰ بخاری نے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ بشری بی بی عمران خان کی “فرنٹ وومن اور پارٹنر ان کرائم” ہیں، ابھی بہت سی چیزیں سامنے آنی باقی ہیں۔

گھڑی والا معاملہ عمران خان کے لیے بڑا امتحان ہے، توشہ خانہ کا قانون بددیانتی پر منبی ہے، عمران خان کو اس قانون سے فائدہ نہیں اٹھانا چاہیے تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں