امریکا کی تحریک طالبان کے خلاف پاکستان کو مدد کی پیشکش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

امریکا نے پاکستان کو کالعدم جماعت تحریک طالبان پاکستان کے خلاف جنگ میں مدد کی پیشکش کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کو شکست دینا دونوں ممالک کا مشترکہ مفاد ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری کے واشنگٹن پہنچنے کے بعد پریس بریفنگ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ "پاکستان اور بھارت کے ساتھ کثیر الجہتی تعلقات ہیں، اپنے شراکت داروں کے درمیان تنائو کم کرنا چاہتے ہیں اور دونوں ممالک کے درمیان تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔"

امریکی ترجمان نے حالیہ صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا "بنوں میں سی ٹی ڈی کمپائونڈ پر دہشتگردوں کے حملے میں زخمی ہونے والے افراد کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہیں۔ حملہ کرنے والوں پر زور دیتے ہیں کہ قبضہ ختم کریں، تشدد کی کارروائیاں بند کریں اور یرغمال لوگوں کو رہا کریں۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ جب دو ممالک کے درمیان مشترکہ خدشات کی بات آتی ہے تو افغانستان کے اندر دہشت گرد تنظیموں اور پاک افغان سرحد پر دہشت گردی کے خلاف کارروائی سمیت مشترکہ مفادات میں امریکا پاکستان کا شراکت دار ہے ۔

انہوں نے کہا کہ شدت پسندوں کیخلاف کارروائی کے لیے پاکستان کی مدد کو تیار ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں