توانائی کی بچت؛ حکومت کا بازار 8 بجے اور شادی ہال 10 بجے بند کرنے کا فیصلہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

پاکستان کی وفاقی حکومت نے ملک میں جاری معاشی بحران کے باعث بازاروں اور شادی ہالز کو رات کو جلد بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اسلام آباد میں وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد بریفنگ میں وفاقی وزیر دفاع خواجہ آصف نے بتایا کہ کابینہ نے کفایت شعاری مہم کےتحت بازاروں اور ریستوران کو رات آٹھ بجے جبکہ شادی ہالز کو رات دس بجے بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

وفاقی وزیر نے حکومتی پالیسی سے متعلق مزید بتایا کہ 20 فی صد سرکاری ملازمین بھی نئی پالیسی کے تحت گھروں سے کام کریں گے۔

وزیر دفاع کے مطابق حکومت کی ان پالیسیوں کے سبب قومی خزانے کو اربوں روپے کا فائدہ ہوگا جب کہ صرف توانائی کی مد میں آٹھ سے نو ہزار میگا واٹ بجلی بچائی جاسکے گی۔

وفاقی وزیر نے حکومتی اقدامات کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ حکومت الیکٹرک سکوٹرز اور کم توانائی سے چلنے والے پنکھے اور بلب برآمد کر رہی ہے جن کے استعمال سے ایک اندازے کے مطابق بجلی کی مد میں تقریبا 38 ارب روپے سالانہ بچا سکیں گے۔

خواجہ آصف کا مزید کہنا تھا کہ اس کے علاوہ متبادل گیزر اور ائیر کنڈیشنر بھی درآمد کئے جائیں گے جن سے بجلی کی بچت میں مزید مدد ملے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں