بھارتی کوسٹ گارڈ،انسدادِدہشت گردی اسکواڈ نے منشیات سے لدی پاکستانی کشتی پکڑلی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بھارتی حکام نے ریاست گجرات کے ساحل سے اسلحہ، گولہ بارود اورمنشیات لے جانے والی مبیّنہ طورپر پاکستانی ماہی گیروں کی کشتی کوپکڑلیا ہے۔

بھارتی کوسٹ گارڈ (آئی سی جی) نے پیر کے روز ایک بیان میں کہا کہ گجرات انسداد دہشت گردی اسکواڈ (اے ٹی ایس) کے ساتھ مشترکہ آپریشن میں پاکستانی ماہی گیر کشتی ’السہیلی‘کو روکا گیا اور اس کی تلاشی لی گئی۔

کشتی میں مبیّنہ طورعملہ کے دس افراد سوار تھے۔اس پرچھے پستول، 120 راؤنڈ گولہ بارود اور 40 کلوگرام نشہ آوراشیاء لدی ہوئی تھیں۔ان کی مالیت تین کروڑ62 لاکھ ڈالر (تین ارب بھارتی روپے) تھی۔

بھارت کی میری ٹائم سکیورٹی اتھارٹی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’آئی سی جی جہاز کی جانب سے چیلنج کیے جانے پر کشتی نے راہ فرار اختیار کرنے کی کوشش کی اورانتباہی گولیاں چلانےکے بعد بھی نہیں رکی‘۔

بھارت کے گشتی جہاز آئی سی جی ایس ارنجے نے یہ کارروائی کی ہے۔ وہ گجرات اے ٹی ایس سے پہلے پاکستانی کشتی کے بارے میں اطلاع ملنے کے بعد 25 اور 26 دسمبر کو اس علاقے میں تھا۔

ٹائمزآف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق ماہی گیروں کی یہ کشتی کراچی سے روانہ ہوئی تھی اور اب اسے تحقیقات کے لیے گجرات کے شہر اوکھا لایا جا رہا ہے۔

گذشتہ 18ماہ کے دوران میں آئی سی جی اور گجرات اے ٹی ایس نے مبیّنہ طور پریہ ساتواں مشترکہ آپریشن کیا ہے۔اس دوران میں 23 کروڑ30لاکھ ڈالر (1930 کروڑ روپے) مالیت کی 346 کلوگرام ہیروئن ضبط کی گئی ہے اور 44 پاکستانی اور سات ایرانیوں کو گرفتار کیا گیا ہے۔

ممبئی میں 26 نومبر2008ءکودہشت گردانہ حملوں کے بعد پاکستانی بحری جہازوں کی طرف سے ہندوستانی پانیوں میں اس طرح کی دراندازی میں کافی حد تک کمی واقع ہوئی ہے جس میں 175 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

اس کے بعد سے بھارت نے اپنی سمندری افواج کو مضبوط کیا ہے اور مزید کوششوں کو ناکام بنانے کے لئے داخلی اور بین الاقوامی سطح پرقانون نافذکرنے والوں اداروں کے درمیان میں تعاون میں اضافہ کیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں