ننکانہ: مشتعل ہجوم کا تھانے پر حملہ، توہین قرآن کا ملزم قتل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پنجاب کے ضلع ننکانہ صاحب میں مشتعل ہجوم نے قرآن پاک کی مبینہ بے حرمتی کے الزام میں گرفتار 35 سالہ شخص کو تھانے میں گھس کر مار ڈالا۔ متعلقہ تھانے کی سیکیورٹی کے ناقص انتظامات پر آئی جی پنجاب نے تھانے کے اہل کاروں کو معطل کر دیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق ننکانہ صاحب کی تحصیل وار برٹن کے رہائشی وارث نامی شخص پر الزام تھا کہ اس نے جادو کے لیے قرآن پاک کا استعمال کیا ہے اور مبینہ طور پر قرآنی اوراق کی بے حرمتی کی۔

مقامی افراد نے مذکورہ شخص کو پولیس کے حوالے کر دیا گیا تاہم کچھ دیر بعد بڑی تعداد میں ہجوم نے تھانے پر حملہ کر دیا اور ملزم کو ان کے حوالے کیے جانے کا مطالبہ کیا جاتا رہا۔

سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی ویڈیوز میں دیکھا جاسکتا ہے کہ بڑی تعداد میں مشتعل افراد تھانے میں جمع ہیں اور ملزم کو ان کے حوالے کیے جانے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ مشتعل ہجوم میں چند افراد تھانے کے اندر گھس گئے اور ملزم کو ہلاک کر دیا، ملزم کی لاش کو برہنہ کر کے گھسیٹا گیا اور اس پر ڈنڈے برسائے گئے۔

نگران وزیراعلی پنجاب سمیت پولیس کے اعلی حکام نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کا حکم دے دیا۔ دوسری طرف واربرٹن میں حالات کشیدہ ہیں جہاں پولیس کی بھاری نفری تعینات کردی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں