امریکی ایوان نمائندگان میں23 مارچ کو یوم پاکستان قرار دینے کی قرارداد پیش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاک-امریکا تعلقات کی تاریخ میں پہلی بار، ایک تاریخی قرارداد ایوان نمائندگان میں پیش کی گئی جس میں کانگریس کے رکن جمال بومن نے 23 مارچ 2023 کو یوم پاکستان کے طور پر تسلیم کیا تاکہ پاکستانی، امریکی کمیونٹی کے اہم کردارکا اعتراف کرنا ہے۔

ریڈیو پاکستان کے مطابق اس موقع پر منظور کی جانے والی قرارداد میں کہا گیا کہ امریکہ کے لیے یہ مناسب اور مطلوب امر ہے کہ وہ ان افراد کو خراج تحسین پیش کرے جو ثقافتی تنوع کو فروغ دیتے ہوئے امریکا میں موجود مختلف کمیونٹیز کے درمیان تعلقات کو مضبوط بنا رہے ہیں جس سے ریاست ہائے متحدہ امریکا کی کمیونٹیز کے تانے بانے کو تقویت ملتی ہے۔

قرارداد میں کہا گیا ہے کہ یوم پاکستان ایک بہترین موقع فراہم کرتا ہے کہ جس کے ذریعے امریکہ کے باشندے پاکستانی ورثے کے بارے میں اپنی آگاہی میں اضافہ کر سکتے ہیں اور آنے والی نسلوں میں اس تاریخی ثقافت کے بارے میں جانکاری کو فروغ دے سکتے ہیں۔

دریں اثنا امریکا میں پاکستان کے سفیر مسعود خان نے کانگریس مین بومن کا ان کے اس اقدام پر شکریہ ادا کیا جس سے ان کا کہنا تھا کہ اس سے نہ صرف دونوں ممالک کے باہمی تعلقات کو مزید مضبوط بنانے میں مدد ملے گی بلکہ دونوں ممالک کے عوام کو ایک دوسرے کے قریب لانے میں بھی مدد ملے گی۔

انہوں نے امریکن پاکستان ایڈووکیسی گروپ کی قیادت بشمول اس کے صدر اور ممتاز کمیونٹی لیڈر علی راشد اور دیگر عہدیداران کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے اس تاریخی قرارداد کو متعارف کرانے کے لیے رکن کانگریس کے ساتھ قریبی رابطہ برقرار رکھتے ہوئے سخت محنت کی۔

انہوں نے کہا کہ 23 مارچ 2023 کو یوم پاکستان کے طور پر تسلیم کرنا اور پاک امریکی شہریوں کی گراں قدر خدمات کو تسلیم کرنا پاک امریکہ تعلقات کی اہمیت اور ان تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کی خواہش کی عکاسی کرتا ہے۔

مسعود خان نے اپنے چیمبر میں کانگریس مین بومن سے بھی ملاقات کی، جنہوں نے ان کا پرتپاک استقبال کیا اور تعلقات کی اہمیت اور تعلیم، طب، سائنس، ٹیکنالوجی، کاروبار اور صنعت سمیت مختلف شعبوں میں پاکستانی تارکین وطن کے اہم کردار کے بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں