کراچی: چڑیا گھر میں بیمار ہتھنی نور جہاں دم توڑ گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

چڑیا گھر کی سترہ سالہ ہتھنی نور جہاں طویل علالت کے بعد ہفتے کو دم توڑ گئی۔ افریقی نسل کی یہ ہتھنی گذشتہ برس نومبر سے بیمار تھی جس کے بعد سے اب تک اس کی طبیعت نہ سنبھل سکی۔

نور جہاں نامی بیمار ہتھنی کی موت کی تصدیق ایڈمنسٹریٹر کراچی ڈاکٹر سیف الرحمان نے کر دی ہے۔

چڑیا گھر کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ نورجہاں کا کچھ ماہ پہلے آپریشن کیا گیا تھا، جس کے بعد پیچیدگیوں کے باعث ہتھنی کو چلنے پھرنے میں دشواری تھی۔

دوسری جانب ایڈمنسٹریٹر کراچی ڈاکٹر سیف الرحمان کا کہنا ہے کہ کل سے ہتھنی نورجہاں بخار میں مبتلا تھی جسے بچانے کے لیے تمام کوششیں کی گئیں۔

انہوں نے بتایا کہ نور جہاں کاعلاج عالمی ماہرین کی زیر نگرانی میں کیا گیا،گزشتہ دنوں ہتھنی کے علاج کے لیے فور پازکی ٹیم بھی کراچی آئی تھی۔

سیف الرحمان کا کہنا ہے کہ ہتھنی نور جہاں کے انتقال پر دکھ ہوا ہے۔

کراچی چڑیا گھر میں کم عمر ہتھنی نور جہاں اپنی عمر سے ایک برس بڑی ساتھی مدھو بالا کے ساتھ رہتی تھی۔

اس سے قبل کئی برس انار کلی اس چڑیا گھر کی رونق تھی جس کی موت کے بعد ان دو ہتھنیوں نے یہاں کی رونق بڑھائی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں