عمران خان کی امریکا سے مدد کی اپیل کی مبینہ آڈیو سامنے آ گئی

امریکی کانگریس کی خاتون رکن سے زوم میٹنگ کی تفصیلات سامنے آ گئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیر اعظم عمران خان کی امریکا سے مدد کی اپیل کی مبینہ آڈیو سامنے آ گئی ہے۔ عمران خان نے تحریک عدم اعتماد کی سیاسی ناکامی کا پورا ملبہ سابقہ آرمی چیف پر ڈال دیا۔ پی ٹی آئی چیئرمین نے امریکی کانگریس وومن کے سامنے اپنے کیس کو پیش کیا۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق مبینہ آڈیو میں عمران خان نے امریکی خاتون میکسین مور واٹرز کے ساتھ زوم میٹنگ میں پاکستان کے معاملات میں مداخلت کی اپیل کی۔ عمران خان نے تمہید میں امریکی خاتون کو بتایا کہ 99 فیصد پاکستان عمران خان کا خواہاں ہے اور وہ مقبول ترین سیاسی رہنما ہیں۔ انہوں نے کہا کہ مجھ پر ایک قاتلانہ حملہ ہوچکا ہے جس میں مجھے ٹانگ میں تین گولیاں لگیں۔

اس وقت ملک انتہائی مشکل صورتحال سے گزر رہا ہے، ہم اس وقت تاریخ کی مشکل ترین صورتحال سے دوچار ہیں۔ عمران خان نے کہا کہ خفیہ ایجنسی یہاں بہت طاقتور ہے۔ عمران خان نے تحریک عدم اعتماد کی ذمہ داری سابقہ آرمی چیف پر عائد کر دی اور امریکی خاتون کے سامنے اپنے دور کی معاشی کارکردگی کو بہترین قرار دیا۔

عمران خان نے کہا کہ میں صرف یہ چاہتا ہوں آپ میرے حق میں آواز اٹھائیں۔ زوم میٹنگ کے آخر میں عمران خان اور ان کے ساتھی خوش نظر آئے۔

ادھر امریکا کی قومی سلامتی امور کے سابق مشیر جان بولٹن نے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان سے ٹیلی فونک رابطہ کیا ہے۔

جان بولٹن نے کہاکہ عمران خان کے ساتھ روا سلوک پاک امریکا تعلقات میں رکاوٹوں اور تناؤ بڑھانے کا سبب ہے، سویلینز کے مقدمات ملٹری کورٹس میں نہیں چلائے جانے چاہئیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں تشدد اور عدم استحکام کا تسلسل کسی کے مفاد میں نہیں۔

دوسری جانب پاکستان کی صورتحال پر 16 کینیڈین اراکین پارلیمنٹ نے وزیراعظم جسٹن ٹروڈو کو بھی خط لکھا ہے۔ خط میں پاکستان میں پرامن مظاہروں کی اجازت پر زور کے ساتھ پاکستان میں تشددکے تمام واقعات کی مذمت کی گئی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں