پاکستان تحریکِ انصاف کے صدر چودھری پرویزالٰہی گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان تحریکِ انصاف (پی ٹی آئی) کے صدر اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب چودھری پرویز الٰہی کو لاہور سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

پنجاب کے نگران وزیر اطلاعات عامر میر نے کہا ہے کہ چودھری پرویز الٰہی کو کرپشن کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔ وہ لاہور میں اپنے گھر سے نکل کر فرار ہونے کی کوشش کر رہے تھے۔ انھیں انسدادِ بدعنوانی پولیس نے حراست میں لیا ہے۔ پرویز الہی کو اینٹی کرپشن پولیس نے گرفتار کیا۔

ویڈیو فوٹیج کے مطابق چودھری پرویز الٰہی اپنی گاڑی میں جا رہے تھے کہ پولیس نے گاڑی روک کر انھیں گرفتار کرلیا۔ پولیس نے چودھری پرویز الٰہی کی گاڑیوں کو لاہور میں ظہور الٰہی روڈ کے گول چکر پر ناکے پر گھیرے میں لے کر انھیں گرفتار کر لیا۔ اینٹی کرپشن حکام انھیں دوسری گاڑی میں بٹھا کر اپنے ساتھ لے گئے۔ سابق وزیراعلیٰ پنجاب کے ترجمان نے بھی ان کی گرفتاری کی تصدیق کی ہے۔

یاد رہے کہ چودھری پرویز الٰہی نے کرپشن کے مقدمے میں لاہور ہائی کورٹ میں عبوری ضمانت کی درخواست دائر کی تھی۔تاہم عدالت نے ان کی درخواست مسترد کر دی تھی کیونکہ ضمانت کے لیے ملزم کا عدالت میں پیش ہونا ضروری ہوتا ہے۔

لاہور کی انسداد بدعنوانی عدالت نے چند روز قبل پرویز الٰہی کی عبوری ضمانت خارج کردی تھی۔ اس کے بعد پولیس کی بھاری نفری ان کی گلبرگ میں واقع رہائش گاہ پہنچ گئی تھی، پولیس کے ہمراہ اینٹی کرپشن کی ٹیم بھی موجود تھی۔تاہم وہ انھیں گرفتار کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکی تھی۔اب ایک مرتبہ پھر کارروائی کرتے ہوئے اینٹی کرپشن پنجاب نے انھیں لاہور میں زیرحراست لے لیا ہے۔خیال رہے کہ سابق وزیراعلٰی پنجاب پرویز الہی کے خلاف ترقیاتی منصوبوں میں مبینہ کرپشن کا کیس ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں