پاکستان:یونان میں کشتی حادثے میں تارکینِ وطن کی ہلاکت کے بعد 10 مشتبہ اسمگلرگرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
4 منٹس read

پاکستان میں حکام نے یونان کے ساحل پر دسیوں تارکین وطن کے ڈوبنے کے بعد 10 مبیّنہ انسانی اسمگلروں کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ وزیر اعظم شہباز شریف نے انسانی اسمگلنگ میں ملوث ایجنٹوں کے خلاف فوری کریک ڈاؤن کا حکم دیا ہے اور کہا کہ انھیں سخت سزا دی جائے گی۔

ہر سال سیکڑوں پاکستانی نوجوان بہتر زندگی کی تلاش میں غیر قانونی طور پر یورپ میں داخل ہونے کی کوشش میں خطرناک سفر کا آغاز کرتے ہیں۔یونان کے جزیرہ نما پیلوپونیز کے قریب گذشتہ بدھ کے روز ڈوبنے والے زنگ آلود ٹرالر میں ممکنہ طور پر درجنوں پاکستانی بھی شامل تھے۔اس کشتی کے ڈوبنے کے نتیجے میں 78 افراد ہلاک اور سیکڑوں لاپتا ہو گئے تھے۔

حکام کا کہنا ہے کہ پاکستان کے زیرانتظام آزاد کشمیر میں نو افراد کو حراست میں لیا گیا ہے۔اس کشتی حادثے کے زیادہ تر متاثرین کا تعلق آزاد کشمیر ہی سے ہے جبکہ ایک شخص کو گجرات شہر سے حراست میں لیا گیا ہے۔

پاکستان کے زیر انتظام کشمیر سے تعلق رکھنے والے ایک مقامی اہلکار چودھری شوکت نے کہا:’’فی الحال ان کے خلاف اس پورے عمل کو آسان بنانے میں ملوّث ہونے کے الزام میں تحقیقات کی جا رہی ہیں‘‘۔

پناہ گزینوں کی بین الاقوامی تنظیم اور اقوام متحدہ کے ادارہ برائے مہاجرین نے ایک مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ کشتی میں 400 سے 750 افراد سوار تھے۔

پاکستان کی وزارت خارجہ نے ہفتے کے روز کہا تھا کہ 12 شہری زندہ بچ گئے ہیں لیکن ان کے پاس اس بارے میں کوئی معلومات نہیں کہ کشتی پر کتنے پاکستانی سوار تھے۔

ایک امیگریشن عہدہ دار نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ یہ تعداد 200 سے تجاوز کر سکتی ہے۔

پاکستان میں سیاسی افراتفری اور تباہی کے دہانے پر کھڑی معیشت کی وجہ سے ہزاروں شہری بہتر روزگار کی تلاش میں قانونی اور غیر قانونی طور پر ملک چھوڑنے کی کوشش کرتے ہیں۔

مشرقی صوبہ پنجاب اور شمال مغربی صوبہ خیبر پختونخوا سے تعلق رکھنے والے نوجوان غیر قانونی طور پر یورپ میں داخل ہونے کے لیے اکثر ایران، لیبیا، ترکی اور یونان کے دشوار گزارزمینی ، پہاڑی اوربحری راستے استعمال کرتے ہیں۔

دریں اثناء وزیرِ اعظم محمد شہباز شریف نے یونان کے قریب بحیرہ روم میں کشتی الٹنے کے واقعے کی انکوائری کی ہدایات جاری کی ہیں اور کہا ہے کہ انسانی اسمگلنگ میں ملوث افراد کے خلاف گھیرا تنگ کیا جائے،انسانی اسمگلنگ جیسے گھناؤنے جرم میں ملوث ایجنٹوں کے خلاف فوری کریک ڈاؤن کیا جائے اورانھیں قرار واقعی سزا دی جائے۔

وزیر اعظم آفس کے میڈیا ونگ سے جاری بیان کے مطابق وزیرِ اعظم نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو لوگوں کو جھانسا دے کر خطرناک اقدامات پر مجبور کرنے والے انسانی اسمگلروں کی نشان دہی کرنے کی ہدایت کی۔

وزیرِ اعظم کی ہدایت پر ایف آئی اے نے ڈی آئی جی عالم شنواری کو واقعے میں جاں بحق ہونے والوں اور زخمیوں کی معلومات و سہولت کے لیے فوکل پرسن مقررکیا ہے۔چیف سیکرٹری آزاد جموں و کشمیر نے بھی پاکستانی سفارت خانہ اور یونانی حکام سے رابطے اور جاں بحق و زخمی ہونے والوں کی معلومات کے لیے فوکل پرسن تعینات کر دیا۔

میاں شہباز شریف نے کشتی الٹنے کے واقعے میں پاکستانیوں کے جاں بحق ہونے پر گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مجھ سمیت پوری قوم کی ہمدردیاں ان کے اہل خانہ کے ساتھ ہیں۔انھوں نے یونان میں پاکستانی سفارت خانہ کو واقعے میں بچائے گئے 12 پاکستانیوں کی دیکھ بھال کی ہدایت کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں