مودی بائیڈن مشترکہ بیان پر پاکستان کا امریکی ڈپٹی چیف آف مشن کو طلب کر کے احتجاج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

پاکستان نے امریکی اور بھارتی صدور کے مشترکہ بیان پر امریکہ کے ڈپٹی چیف آف مشن کو پیر کی شام وزارت خارجہ میں طلب کر کے بیان کے حوالے سے ڈیمارش کیا گیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق امریکہ بھارت مشترکہ بیان میں غیر ضروری، یک طرفہ اور گمراہ کن حوالوں پر پاکستان کے تحفظات اور مایوسی سے امریکہ کو آگاہ کیا گیا۔

مشترکہ بیان میں نریندر مودی اور جو بائیڈن نے پاکستان سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ یقینی بنائے کہ اس کی سرزمین بھارت کے خلاف متشدد حملوں کے لئے استعمال نہیں ہو گی۔

دفتر خارجہ نے اس بات پر زور دیا گیا کہ امریکہ ایسے بیانات جاری کرنے سے گریز کرے جو پاکستان کے خلاف بھارت کے بے بنیاد اور سیاسی بیانیے کی حوصلہ افزائی کے طور پر سمجھے جائیں۔

ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان انسداد دہشت گردی کے شعبہ میں تعاون بہتر طور پر آگے بڑھ رہا ہے اور یہ کہ اعتماد اور افہام و تفہیم پر مرکوز ماحول پاک امریکہ تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کے لیے ناگزیر ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں