سویڈن میں قرآن کی بے حرمتی کے خلاف پاکستان میں ’یوم تقدس قرآن‘ منایا جا رہا ہے

’’قرآن پاک کی سویڈن میں توہین کے دلخراش واقعہ پر نماز جمعہ کے بعد تمام پاکستانی پر امن احتجاج ریکارڈ کرائیں گے‘‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سویڈن میں قرآن کی بے حرمتی کے حالیہ واقعے کے خلاف پورے پاکستان میں 'یوم تقدیس قرآن' منایا جا رہا ہے اور ملک گیر احتجاج ریلیاں نکالی جائیں گی۔ گذشتہ روز بھی پاکستانی پارلیمان نے سویڈن واقعے پر مذمتی قرارداد منظور کیا۔

وزیراعظم محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ سویڈن میں ایک بدبخت کے ہاتھوں قرآن پاک کی بے حرمتی کے دلخراش واقعہ پر آج بعد نماز جمعہ تمام پاکستانی پر امن احتجاج ریکارڈ کرائیں گے۔ جمعہ کو اپنے ٹویٹ میں وزیراعظم نے کہا کہ قرآن مجید کی حرمت کے معاملہ پر پوری قوم ایک ہے۔

سانحہ سویڈن پرپوری امت مسلمہ مضطرب ہے۔ ایک بد بخت کے ہاتھوں قرآن پاک کی بے حرمتی

کے دلخراش واقعے پر اپنے جذبات اور احساسات کا اظہار کرنے کے لئے یوم تقدیس قرآن کے عنوان سے آج ہم سب سے یک آواز ہو کر ملک گیر احتجاج کریں گے اور بعد از نماز جمعہ پاکستانی قوم مسلمانوں کے تمام طبقات ناموس قرآن کا پرچم اٹھا کر اپنا پر امن احتجاج ریکارڈ کرائیں گے۔ وزیراعظم نے کہا کہ قرآن ہمارے قلب میں ہے۔ قرآن ہمارے لئے صرف قرات نہیں بلکہ جینے کا قرینہ ہے۔

جماعت اسلامی نے سوشل میڈیا پر اپنے پیغام میں کہا، "سات جولائی کو پورے ملک میں مظاہرے اور ریلیاں ہوں گی۔ نمازِ جمعہ کے بعد ہر مسجد سے وہاں کے امام کی قیادت میں جلوس نکلے گا۔ یہ مظاہرے صرف پاکستان میں نہیں بلکہ پانچ براعظموں میں ہوں گے۔"

اپوزیشن پاکستان تحریک انصاف کی طرف سے سوشل میڈیا پر جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ"سویڈن میں قرآن پاک کی بے حرمتی کے خلاف چیئرمین عمران خان کی کال پر پرامن احتجاج ہو گا... پوری قوم متحد ہوکر مغرب کو واضح پیغام دے کہ آیات مقدسہ کی بے حرمتی کی کسی صور ت میں اجازت نہیں دی جا سکتی۔"

خیال رہے کہ سویڈن کی دارالحکومت اسٹاک ہولم کی سب سے بڑی مسجد کے سامنے 28 جون کو عراق سے تعلق رکھنے والے ایک پناہ گزین سلوان مومیکا کے ذریعہ قرآن کی بے حرمتی اور اس کے صفحات کو نذر آتش کرنے کے بعد پاکستان سمیت مسلم اور عرب دنیا میں بڑے پیمانے پر غم و غصے کا اظہار کیا جارہا ہے اور اس واقعے کی مذمت کی جارہی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں