آئی ایم ایف بورڈ نے پاکستان کے 3 ارب ڈالر کے بیل آؤٹ پروگرام کی منظوری دے دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) کے بورڈ نے بدھ کے روز پاکستان کے لیے 3 ارب ڈالر کے بیل آؤٹ پروگرام کی منظوری دے دی ہے، جس کے تحت جنوب ایشیائی ملک کی مدد کے لیے فوری طور پر 1.2 ارب ڈالر جاری کیے جائیں گے۔

پاکستان اور فنڈ نے گذشتہ ماہ عملہ کی سطح پر ایک معاہدہ طے کیا تھا، جس کے تحت نقد رقوم کی قلت سے دوچار ملک کے لیے انتہائی ضروری فنڈز حاصل کیے گئے تھے۔

اس پیکج کے تحت پاکستان کو رقم کی پہلی قسط کے اجراء سے پہلے آئی ایم ایف کے بورڈ کی منظوری کی ضرورت تھی جبکہ باقی رقم اقساط میں بعد میں جاری کی جائے گی۔

بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے ایگزیکٹو بورڈ نے پاکستان کے لیے 2,250 ملین(دوارب پچیس کروڑ) ایس ڈی آر(اسپیشل ڈرائنگ رائٹ) (قریباً 3 ارب ڈالر یا کوٹے کا 111 فی صد) کی رقم کے لیے 9 ماہ کے اسٹینڈ بائی انتظامات (ایس بی اے) کی منظوری دی ہے۔

بورڈ کے ایک بیان کے مطابق یہ انتظامات پاکستان کے لیے ایک مشکل معاشی موڑ پرکیے گئے ہیں۔ ملک کو اس وقت مشکل بیرونی ماحول، تباہ کن سیلاب اور غلط پالیسی اقدامات کی وجہ سے بڑے مالیاتی اور بیرونی خسارے کا سامنا ہے جبکہ مالی سال 2023ء میں افراطِ زر کی شرح میں اضافہ ہوا ہے اور زرمبادلہ کے ذخائر سکڑکررہ گئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں