پاکستان کی مخیّر شخصیت لندن میں ایوارڈز کی تقریب میں’’عشرے کا عالمی آدمی‘‘ قرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان کی معروف مخیّر شخصیت ڈاکٹر امجد ثاقب کو غربت کے خاتمے اور سماجی ترقی میں ان کی کامیابیوں کے اعتراف میں ’’عشرے کا عالمی آدمی‘‘ (گلوبل مین آف دی ڈیکیڈ) کے ایوارڈ سے نوازا گیا ہے۔

ڈویلپمنٹ پریکٹیشنر ڈاکٹر امجد ثاقب نے 2001 میں اخوت فاؤنڈیشن کی بنیاد رکھی تھی۔ یہ ایک مائیکرو فنانس ادارہ ہے اورغریبوں کوبلاسود قرضے دیتا ہے۔ اخوت کا کہنا ہے کہ یہ دنیا کا سب سے بڑا بلاسود مائیکرو فنانس پروگرام ہے۔

ڈاکٹر امجد ثاقب نے لندن میں منعقدہ تقریب میں ایوارڈ وصول کرنے کے بعد کہا کہ ’’میں اس عالمی اعزاز کو حاصل کرنے پر بہت فخر اور عاجزی محسوس کرتا ہوں۔یہ ایک بار پھر خوشی کی بات ہے کہ مجھے یہ ایوارڈ بہت سے رہنماؤں، مردوں اور خواتین کی موجودگی میں مل رہا ہے جو اس دنیا کو تبدیل کر رہے ہیں‘‘۔

انھوں نے اپنا ایوارڈ پاکستان کے عوام اور رضاکاروں کے نام وقف کیا جو ’’ایک بہتر دنیا کی تعمیر کے لیے جدوجہد کررہے ہیں۔ ایک ایسی دنیا جو غُربت اور استحصال سے پاک ہو‘‘۔

دریں اثناء پاکستانی کاروباری شخصیت اور سماجی کارکن ہُما فخر کو بھی تقریب میں ایوارڈ سے نوازا گیا ہے۔انھیں 'گلوبل ویمن انسپائریشن ایوارڈ' دیا گیا ہے۔

ہمافخرسلطانہ رائس اینڈ میپ کیپٹل تنظیموں کی بانی اور سی ای او ہیں۔کاروبار میں ان کے متاثر کن کام کے اعتراف میں انھیں یہ اعزاز دیا گیا ہے۔

مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق ہُما فخر پاکستان میں یتیم خانوں میں اسکول کی سطح پر خاص طور پر لڑکیوں میں انٹرپرینیورشپ کی حوصلہ افزائی کر رہی ہیں تاکہ وہ بااختیار ہوسکیں اور اپنے لیے روزی کما سکیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں