جڑواں شہروں میں طوفانی بارش، دیوار گرنے کے واقعات میں بچی سمیت 12 افراد جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اسلام آباد اور راولپنڈی میں موسلادھار بارش کے باعث دیواریں گرنے کے واقعات میں 12 افراد جاں بحق ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں پشاور روڈ پر گولڑہ موڑ کے قریب زیرتعمیر انڈر پاس کے قریب دیوار گرنے والی دیوار کے پاس مزدور اپنے خیموں میں سورہے تھے کہ شدید بارش کے دوران صبح سویرے قریبی دیوار خیموں پر گرگئی۔

اسلام آباد میں تھانہ نون کے علاقے پشاور روڈ پر گولڑہ موڑ کے قریب شدید بارشوں کے سبب دیوار گرنے سے 11 افراد ملبے تلے دب کر جاں بحق ہو گئے۔

ایس پی انڈسٹریل ایریا خان زیب نے حادثے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ امدادی ٹیموں نے مشین کی مدد سے اب تک 11 افراد کی لاشیں نکالی ہیں، ملبے کے نیچے سے 4 زخمیوں کو بھی زندہ حالت میں نکال لیا گیا ہے، مزید افراد کی ممکنہ ملبے کے نیچے ہونے کی اطلاع پر ریسکیو آپریشن جاری ہے۔

انہوں نے کہا کہ فوری طور پر ریسکیو ٹیموں کو جائے وقوعہ پر پہنچا دیا گیا، مزید افراد کی تلاش کے لیے مشین کی مدد سے ریسکیو آپریشن جاری ہے۔

حکام کے مطابق بارش کا پانی دیوار کے دونوں جانب جمع ہوگیا تھا جس کی وجہ سے دیوار گری۔

واضح رہے کہ اسلام آباد اور راولپنڈی میں گذشتہ کئی روز سے شدید بارشوں کا سلسلہ جاری ہے، 15 جولائی کو موسلا دھار بارش کے نتیجے میں جڑواں شہروں میں رین ایمرجنسی کا اعلان کر دیا گیا تھا۔

رواں ماہ کے آغاز میں 5 جولائی کو پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں ریکارڈ موسلادھار بارش کے نتیجے میں مختلف حادثات میں 7 افراد جاں بحق ہوگئے تھے جبکہ شہر میں سیلابی صورت حال پیدا ہونے سے انفرااسٹرکچر کو شدید نقصان پہنچا۔

یہ سلسلہ اگلے روز بھی جاری رہا اور 6 جولائی کو پنجاب کے مختلف علاقوں میں مسلسل دوسرے روز بھی موسلادھار بارش اور اس کے نتیجے میں چھتیں گرنے اور دیگر واقعات میں مجموعی طور پر 17 افراد جاں بحق اور 49 زخمی ہوگئے تھے۔

محمکہ موسمیات کے مطابق بحیرہ عرب سے مون سون ہوائیں 18 جولائی کی شام ملک کے بالائی اور وسطی علاقوں میں داخل ہوں گی جو 19 جولائی کو شدت اختیار کریں گی۔

بیان میں کہا گیا تھا کہ 18 سے 22 جولائی کے دوران اسلام آباد، راولپنڈی، پشاور، گجرانوالہ اور لاہور میں موسلا دھار بارش کے باعث نشیبی علاقے زیر آب آنے کا خدشہ ہے۔

دوسری جانب خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق پاکستان میں مون سون کی بارشوں کے باعث پنجاب کے مختلف دیہاتوں سے 14 ہزار کے قریب رہائشیوں اور ان کے مویشیوں کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا گیا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں