پاکستان اور یو اے ای کے درمیان کراچی بندرگاہ پر کارگو ٹرمینل بنانے کا معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

پاکستان نے پیر کو متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کے لیے کراچی بندرگاہ پر ایک بلک اور جنرل کارگو ٹرمینل تیار کرنے کے لیے ایک فریم ورک معاہدے کی منظوری دے دی ، جس کا اعلان پاکستان کی وزارت خزانہ نے پیر کو کیا۔

گذشتہ ہفتے پاکستان نے اس پر پیش رفت کے لیے متحدہ عرب امارات کی حکومت کے ساتھ فریم ورک معاہدے کے مسودے پر بات چیت کے لیے ایک کمیٹی تشکیل دی تھی جس میں سیکریٹری قانون و انصاف، سیکریٹری میری ٹائم افیئرز اور وزارت خارجہ اور خزانہ کے نمائندے شامل تھے۔

متحدہ عرب امارات کے ساتھ معاہدے پر دستخط کرنے کا حتمی فیصلہ پیر کو وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی زیر صدارت کابینہ کمیٹی برائے بین الحکومتی تجارتی لین دین کے اجلاس میں کیا گیا۔

وزارت خزانہ نے بیان میں کہا کہ "کمیٹی نے وفاقی کابینہ کی توثیق کے لیے فریم ورک معاہدے کے مسودے کی منظوری دے دی۔" "معاہدے پر متحدہ عرب امارات اور پاکستان کی حکومتوں کے درمیان دستخط ہوں گے۔"

اس سے قبل متحدہ عرب امارات کی ابوظبی پورٹس ، جو ایک معروف بندرگاہ آپریٹر ہے، نے گذشتہ ماہ کراچی پورٹ ٹرسٹ کے ساتھ کراچی میں ایک پورٹ ٹرمینل کو سنبھالنے کے حوالے سے 50 سالہ رعایتی معاہدے پر دستخط کیے تھے۔

اس مشترکہ منصوبے سے پہلے 10 سالوں میں پاکستان میں 220 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کی جائے گی۔

توقع ہے کہ اس معاہدے سے پاکستان اور متحدہ عرب امارات کے دوطرفہ تعلقات کو فروغ ملے گا اور اہم ممالک کے ساتھ تجارتی روابط مضبوط ہوں گے، جس سے پاکستان کی اقتصادی ترقی میں اضافہ ہوگا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں