وزیراعظم کی سعودی کمپنیوں کو پاکستان میں سرمایہ کاری کے مواقع سے فائدہ اٹھانے کی دعوت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

وزیراعظم محمد شہباز شریف نے سعودی حکومت اور کمپنیوں کو پاکستان میں زراعت، کان کنی، انفارمیشن ٹیکنالوجی، توانائی اور دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کے مواقع سے فائدہ اٹھانے کی دعوت دی ہے۔

وزیراعظم شہباز شریف سے سعودی عرب کے نائب وزیربرائے خارجہ امور ولید عبدالکریم الخریجی نے منگل کے روز اعلیٰ سطح کے وفد کے ہمراہ ملاقات کی۔ وفد میں سعودی نائب وزیر برائے خارجہ امور کے ساتھ توانائی، صحت، ماحولیات اور زراعت، صنعت اور معدنی وسائل، سرمایہ کاری کی سعودی وزارتوں کے اعلیٰ حکام شامل تھے۔

وزیراعظم نے وفد کا خیرمقدم کیا اور مملکت کے ساتھ دوطرفہ تعلقات کے مثبت انداز پر اطمینان کا اظہار کیا۔انھوں نے سعودی قیادت کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔انھوں نے بالخصوص سیلاب کی تباہ کاریوں کے بعد پاکستان کی بروقت مالی اور انسانی امداد پر سعودی عرب کا شکریہ ادا کیا اور ملک میں میکرو اکنامک استحکام حاصل کرنے کی کوششوں میں سعودی عرب کے کردار کو سراہا۔

انھوں نے سعودی حکومت اور کمپنیوں کو زراعت، کان کنی، آئی ٹی، توانائی اور دیگر شعبوں میں سرمایہ کاری کے مواقع سے فائدہ اٹھانے کی دعوت دی۔انھوں نے کہا کہ خصوصی سرمایہ کاری سہولت کونسل (ایس آئی ایف سی) کا قیام خلیج تعاون کونسل (جی سی سی) کے رکن ممالک بالخصوص مملکت سعودی عرب کی ممکنہ سرمایہ کاری کو آسان اور تیز تر بنائے گا۔

اس سلسلے میں وزیراعظم نے پاکستان میں سرمایہ کاری کے مواقع تلاش کرنے میں مملکت کی سنجیدہ دلچسپی کو سراہا۔ سعودی وفد کا دورہ دونوں طرف سے دیرینہ برادرانہ تعلقات کو ٹھوس اور باہمی طور پر فائدہ مند اقتصادی شراکت داری میں تبدیل کرنے کے لیے گہری دلچسپی اور آمادگی کا مظہر ہے۔ یہ دورہ دونوں ممالک کے درمیان کثیرالجہت تعاون کو مزید بڑھانے میں معاون ثابت ہوگا۔ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان برادرانہ دوطرفہ تعلقات کی ایک دیرینہ تاریخ ہے جو باہمی اعتماد اور افہام و تفہیم اور قریبی باہمی تعاون کی لازوال روایت پر مشتمل ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں